وزیراعظم کیخلاف توہین عدالت کا مقدمہ، سپریم کورٹ کا7 ججز پر مشتمل بنچ بنایا جائے: شاہد اورکزئی کی درخواست

30 جنوری 2015

اسلام آباد (آن لائن) وزیراعظم نواز شریف کے خلاف توہین عدالت کے مقدمے کی سماعت کیلئے سپریم کورٹ سے سات ججوں پر مشتمل خصوصی بینچ کی تشکیل کی درخواست کی گئی ہے  اس ضمن میں سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے مقدمے کا حوالہ دیا گیا ہے۔ جس میں سات رکنی بینچ کی صدارت موجودہ چیف جسٹس نے کی تھی۔ شاہد اورکزئی  نے اپنی درخواست میں کہا ہے کہ غیر جانبدارانہ عدالتی کارروائی کیلئے سپریم کورٹ کو میاں نواز شریف کے سیاسی اثر اور درپردہ مداخلت کا تدارک کرنا ہو گا۔ عدالت میں موقف  اختیار کیا گیا ہے کہ وزیراعظم ماضی میں جج صاحبان کے ساتھ خفیہ سیاسی مراسم رکھتے تھے انہوں نے ایک سابق جج کو صدر  بنوایا  ایک سابق چیف جسٹس کو اپنی جماعت کا صدارتی امیدوار نامزد کیا۔ ججوں کو سیاست میں ملوث کرنا انکا شیوہ ہے۔ عدالت کو یاد دلایا گیا  ہے کہ نومبر 1997ء میں اپنے خلاف توہین عدالت کے مقدمے کی سماعت کے دوران انہوں نے عدالت پر حملہ کرایا چیف جسٹس  کی سربراہی میں پانچ رکنی بنچ کو مقدمہ ترک کرنا پڑا۔