دہشت گردی کے رجحانات ختم کرنے کیلئے تعلیم بڑا ہتھیار ہے : شہباز شریف

30 جنوری 2015

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے گزشتہ روز برٹش کونسل کے چیف ایگزیکٹو سیرن ڈیوائن کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی جس مےں پنجاب میں شعبہ تعلیم میں جاری تعاون کو مزید فروغ دینے پر اتفاق کیا گیا۔ شہباز شریف نے برٹش کونسل کے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے گزشتہ 6 برس کے دوران تعلیم کے فروغ کیلئے انقلابی اقدامات اٹھائے ہیں۔ معیاری تعلیم حاصل کرنا ہر بچے کا حق ہے اور حکومت پنجاب یہ حق بچوں کو لوٹا رہی ہے۔ پنجاب میں اعلیٰ تعلیم کے فروغ کیلئے صوبائی ہائر ایجوکیشن کمیشن تشکیل دیا گیا ہے۔ برطانیہ کے بین الاقوامی ترقی کے ادارے (ڈیفڈ) کے تعاون سے پنجاب سکول ریفارمز روڈمیپ پروگرام پر کامیابی سے عملدرآمد کیا جا رہا ہے جس کے انتہائی مثبت نتائج سامنے آ رہے ہیں۔ انتہاپسندی اور دہشت گردی کے رجحانات کے خاتمے کیلئے تعلیم کی گولی سب سے بڑا ہتھیار ہے۔ صوبے میں ڈیفڈ کے تعاون سے سکل ڈویلپمنٹ کا پروگرام بھی کامیابی سے چلایا جا رہا ہے۔ اس پروگرام کے تحت ہزاروں نوجوانوں کو ہنرمند بنایا گیا ہے۔ سکل ڈویلپمنٹ پروگرام کے تحت نوجوانوں پر سرمایہ کاری کرکے انہیں باعزت روزگار فراہم کیا جا رہا ہے۔ پنجاب حکومت نوجوانوں پر سرمایہ کاری کرکے انہیں با اختیار بنا رہی ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب ایجوکیشن فاﺅنڈیشن کی واوچر سکیم کے تحت 10 لاکھ سے زائد طلبا و طالبات کو سکولوں میں داخلہ دیا گیا ہے۔ پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کا قیام پنجاب حکومت کا ایک اور تاریخی اقدام ہے۔ پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کا مجموعی حجم 12 ارب روپے تک پہنچ چکا ہے اور اس فنڈ سے ہزاروں ذہین اور مستحق طلبا و طالبات کو تعلیمی وظائف فراہم کئے گئے ہیں۔