ڈومور کی پکار

30 جنوری 2015
ڈومور کی پکار

مکرمی! قوموں کی زندگی میں اتار چڑھائو آتا رہتا ہے۔ زندہ قومیں اپنے برے تجربات سے سبق سیکھتی ہیں اور مستقبل کے لیے لائحہ عمل کی تشکیل کرتی ہیں۔پاکستانی قوم اپنے اسلوب میں یوں بھی نمایاں ہے کہ یہ ایک ہی سوراخ سے بار بار ڈسی جاتی ہے۔’’ڈو مور ڈومور‘‘ کی پکار جب بھی فضا میںگونجتی ہے ‘پاکستانی سیاست میں جیسے ایک ہل چل سی مچ جاتی ہے۔بھارت معاشی ترقی میں بہت پھر تیلا ہے ‘ مودی ابامہ ملاقات ہو یا مارک ذکر برک کا دورہ ’ٹریڈ‘ بھارت کر ملتی ہے اور ڈومور کی ’پریڈ‘ پاکستان کے حصے میں آتی ہے۔بھارت امریکہ جوہری توانائی معاہدہ بھی پاکستان کی آنکھیں کھولنے کو کافی ہے۔پاکستانی حکومت کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ ملکی مفاد کو پیش نظر رکھ کر اپنی خارجہ پالیسی پر توجہ دے۔ دہشت گردی سے نجات اور توانائی بحران پر قابو پانا پاکستان کے وجود کا سوال ہے اور وجود کی بقا کا سوال پر کوئی سمجھوتہ گوارہ نہیں کیا جا سکتا۔(عروشہ عامر خان لاہور)

زینب کے والد کی پکار

زینب سے زیادتی اور قتل کے ملزم عمران کی گرفتاری کا اعلان منگل کے روز وزیر ...

تھر کے عوام کی پکار

اللہ تعالیٰ نے پاکستان کو تھرکے ریگستان کی شکل میں قدرتی وسائل سے مالامال ...