پولیو ڈراپس کا معاملہ، اسلام آباد کی ضلعی انتظامیہ دو گرپوںمیں تقسیم ہوگئی

29 مئی 2017

اسلام آباد(وقائع نگار) پولےو ڈراپس معاملہ ضلعی انتظامےہ اسلام آباد دو گروپس مےں تقسےم ہو گےا ہے چےف کمشنر اسلام آباد اور ڈی سی آفس مےں خلےج بڑھ گئی ہے اور انتظامےہ کے دونوں دھڑے اےک دوسرے خلاف کاروائےاں کرنے مےں مصروف ہو گئے ہےں ذرائع کے مطابق ضلعی انتظامےہ اسلام آباد مےں چےف کمشنر اسلام آباد ذوالفقار حےدر خان کی جانب سے خاتون آفےسر کی بےٹی کو قطرے پلانے کی پاداش مےں ضلع بدر کےے جانے والے اسسٹنٹ کمشنر کے احکامات واپس ہونے پر چےف کمشنر اور ڈی سی کے دفاترز دو گروپوں مےں تقسےم ہوگئے ہےں اور دونوںگروپس سکور سےٹل کرنے مےں لگے ہوئے ہےں جس سے انتظامی امور مےں ابتری ہوئی ہے ۔ چےف کمشنر اسلام آباد جو کہ گرےڈ اکےس کے آفےسر ہےں تاہم ان کی انتظامی امورپرکمانڈ نہ ہونے کے برابر ہے پولےس کے ساتھ ان کے تنازعات ہو وقوع پذےرہونا اور ماتحت آفےسرز کی کرپشن کو صرف نظر کرنا ان کی مجبوری بن چکا ہے تاہم وزےرداخلہ بھی چےف کمشنر کی گرتی ہوئی ساکھ اورانتظامی امور مےںناکامےوں پر ان کےخلاف تاحال خاموش ہےں اس زرےعے کے مطابق چےف کمشنر آفس کے زےر انتظام کوآپرےٹےو کاشعبہ کرپشن سے اٹا پڑ ا ہے اےڈمنسٹرےٹر اورڈائرےکٹر ڈوےلپمنٹ کے خلاف بے پناہ شکاےات ہےں افسران رئےل اسٹےٹ کے گاروبار مےں سرعام ملوث ہےں تاہم ان کے خلاف کاروائی نہےںہورہی ے جبکہ دوسری طرف ڈپٹی کمشنر اپنی ٹےم کے ساتھ چےف کمشنر کی بے اعتنائی کا رونا رورہے ہےں ۔واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے ڈائرےکتر اےکسائز مرےم ممتاز نے اپنی بےٹی کو زبردستی پولےو کے قطرے پلانے کی کوشش پر متعلقہ اسسٹنت کمشنر کو فارغ کروا دےا تھا جس کے بعد سےہ مذکورہ دونوں دفاترز بلاکس مےں تقسےم ہو گئے ہےں ۔