جماعت الدعوة نے تھرپاکر میں 200 خاندانوں میں راشن تقسیم کیا

29 مئی 2017

اسلام آباد( وقائع نگار خصوصی) جماعة الدعوة اسلام آباد کی جانب سے تھر پارکر میں 2سو سے زائد خاندانوں میں خشک راشن تقسیم کر دیا گیا، سو بچوں میں جو تے اور کپڑے جبکہ پینے کے لیے صاف پانی کی فراہمی کے لیے سولر پراجیکٹ کا آغاز بھی کر دیا گیا ہے ، تفصیلات کے مطابق رمضان المبارک کے آغاز سے قبل جماعة الدعوة کی جانب سے دس لاکھ سے زائد مالیت کا خشک راشن اور جوتے و کپڑے تقسیم کیے گئے ، جماعة الدعوة شعبہ تعلقات عامہ کے انچارج شوکت سلفی کے مطابق اسلام کوٹ ، مٹھی چھاچھرو، عمر کوٹ، نو کوٹ، ڈپلو اور دیگر علاقوں میں یہ سامان تقسیم کیا گیا، علاوہ ازیں تھر پارکر کے مختلف علاقوں میں پانی کی فراہمی کے لیے سولر منصوبوں کا بھی جائزہ لیا گیا اسلام آباد کی جانب سے تھر پارکرمیں 9مختلف مقامات پرمنصوبے کام کر رہے ہیں جن کی وجہ سے لگائی گئی فصلوں سے 450من پیاز بھی حاصل کیا گیا خاندانوں میں تقسیم کیے گئے راشن پیک میں آٹا،چاول ، گھی، چینی، دالیں اور دیگرضروریات زندگی کی اشیاءشامل ہیں۔شوکت سلفی نے کہا کہ تھرپارکر سندھ اور بلوچستان کے دور دراز علاقوںمیں ریلیف سرگرمیوں کے ذریعہ بیرونی سازشیں دم توڑ گئی ہیں۔انہوںنے کہاکہ تھرپارکر اور بلوچستان کے دور افتادہ علاقوںمیں غریب و نادار لوگوں کیلئے یہ سامان بھجوایا جارہا ہے تاکہ وہاں کے رہنے والے ہمارے بھائی بھی سحروافطار میں شریک ہو سکیں۔ ہم ان علاقوںمیں امدادی سامان بھجوارہے ہیں جو دور دراز ہونے کی وجہ سے ہماری آنکھوں سے اوجھل ہیں اورغیر ملکی این جی اوزوہاں لوگوں کی غربت سے فائدہ اٹھاتے ہوئے نہ صرف علیحدگی پسندی کی تحریکوں کو پروان چڑھا رہی ہیں بلکہ مسلمانوں کے دین و ایمان کو بھی برباد کیا جا رہا ہے ہم جن علاقوں میں افطار الصائم کے لئے سامان روانہ کر رہے ہیں وہاں پینے کا میٹھا پانی اور پھل دستیاب نہیں ۔تھر پارکر میں ٹھنڈے پانی کو لوگ میٹھا پانی کہتے ہیں۔ان علاقوں میں برف کی بھی پہچان نہیں۔انہوں نے کہا کہ فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن کے تحت ملک بھر میں خدمت خلق کا کام جاری ہے۔رمضان سے پہلے رمضان پیکج بھجوانا اس بات کی دعوت ہے کہ ہمیں رمضان المبارک میں افطار الصائم کا اہتمام کرنا چاہئے اور دوسروں کا خیال رکھنا چاہئے۔