ترک ڈاکٹر نے جگر کی پیوند کاری میں ایک نیا طریقہ ایجاد کر لیا

29 مئی 2017

انقرہ (اے پی پی) ترک سائنسدانوں نے ایک زندہ ڈونر سے جگرکی پیوند کاری میں دنیا میں پہلی بار ایک نیا طریقہ کار استعمال کرتے ہوئے اس کے نتائج سے عالمی جگر پیوند کاری کانگرس کوآگاہی کرائی ہے۔ اتوار کو ذرائع ابلاغ کے مطابق اس نئے طریقے کے ذریعے جسم میں خون کی گردش کروانے والی رگوںکو بائی پاس کیا گیا اور مریض کے جگر کو مرکزی رگوں کے ہمراہ جسم سے باہر نکالا گیااور ڈونر کے جگر کی مرکزی رگوں کے ساتھ پیوند کاری کرتے ہوئے اسے مریض کو دوبارہ لگا دیا گیا۔ترک ڈاکٹر دینز بالجی نے جو کہ انقرہ یونیورسٹی کے شعبہ طب کے ایسوسی ایٹ پروفیسر بھی ہیں کا کہنا ہے کہ اس طریقے سے مریض سے خون کے بے تحاشا اخراج اور دورہ قلب کے خطرات کا سد باب کیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ یہ آپریشن بڑا کامیاب رہا ہے اور یہ ترکی اور ترک ڈاکٹروں کے علم طب میں کسی حد تک آگے ہونے کا واضح مظہر بھی ہے۔