ضلعی انتظامیہ اتوار بازاروں میں گلے سڑے پھل‘ سبزیوں کی فروخت روکنے میں ناکام

29 مئی 2017

لاہور(خبر نگار) ضلعی انتظامیہ رمضان اور اتوار بازاروں میں گرانفروشی، گلے سڑے پھلوں اور سبزیوں کی فروخت روکنے میں پھر مکمل ناکام ہوگئی۔ حکومت نے لاہور میں گیارہ ہوگئی حکومت نے لاہور میں گیارہ ائیرکنڈیشنڈ رمضان بازار تو لگادیئے مگر وہاں قیمتوں کے مکمل، کنٹرول میں ناکام ہوگئی حکومت نے عوام کو سستی اشیاء کی فروخت یقینی بنانے کیلئے لاہور میں 31بازار لگائے ہیں مگر حالت یہ ہے کہ حکومت نے سارا سال کیلئے لگائے گئے مستقل بازاروں میں جو رمضان بازار لگائے ہیں وہاں دو نرخ الگ الگ پر عمل ہورہا ہے رمضان بازاروں میں کیلے کی قیمت 100روپے درجن مقرر کی گئی تھی مگر وحدت کالونی میں مستقل بازار کے اہلکاروں نے سارا سال لگی رہنی والی دکانوں پر کیلے کا نرخ 120مقرر کردیا اور اس پر زبردستی عمل بھی کروایا لیموں جس کی قیمت 175روپے کلو مقرر کی گئی تھی رمضان اور اتوار بازاروں سے غائب تھا۔ ٹماٹر جو دو ہفتے پہلے 10روپے کلو گلیوں، محلوں میں ریڑھی پر بک رہا تھا رمضان بازار میں 20اور بازار کے یہ ریڑھی پر 30روپے کلودستیاب تھا رمضان کے پہلے اتوار بازار میں بیشتر سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں میں اضافہ ہوگیا۔ کریلے 23، پالک 22، ٹینڈے دیسی 50، ٹینڈیاں فارمی 18لیموں دیسی 177، میتھی 45، بند گوبھی 2روپے اضافہ سے 16، شملہ مرچ 15روپے اضافہ سے 40، ادرک چائنہ 9روپے اضافہ سے 104، ادرک تھائی لینڈ 4روپے اضافہ سے 70، ٹماٹر ایک روپے اضافہ سے 20، آلو کچا چھلکا ایک روپے اضافہ سے 34 روپے کلو ہوگیا جبکہ اروی 5روپے کمی سے 55، لہسن برنائی 6روپے کمی سے 145کھیرا 10روپے کمی سے 25روپے کلو ہوگیا۔ پھلوں میں سیب کالا کولو میدانی 5روپے اضافہ سے 95، سیب ایرانی 184، سیب نیوزی لینڈ 14روپے اضافہ سے 264، سیب چائنہ10روپے اضافہ سے 208، آم دوسہری 5روپے اضافہ سے 115، کھجور ایرانی4روپے اضافہ سے 150، کھجور امیل 3روپے اضافہ سے 133سیب کالا کولو5روپے اضافہ سے 160اونے کلو ہوگئے آم سرکاری قیمت پر دستیاب تھے مگر بی کیٹیگری آم تھے۔علاوہ ازیں فیروز والا میں رمضان المبارک کے پہلے ہی روز کھجور کا مانگ بڑھ جانے کے باعث قیمتوں میں اضافہ ہوگیا، قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگی۔