نویں جماعت کی طالبہ پر تشدد، زخمی کرنے میں ملوث سکول ٹیچر سمیت 5 معطل

29 مئی 2017

لاہور(سٹاف رپورٹر)سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ گرلزہائی سکول فیکٹری ایریاء شاہدرہ کی نویں کلاس کی طالبہ فجر نور کو مبینہ تشدد کا نشانہ بنانے کے بعددھکا دیدیا جس سے طالبہ شدید زخمی ہو گئی طالبہ کا ہسپتال میں علاج جاری تاہم حالت تشویشناک بتائی گئی ہے سکول ٹیچرز کی جانب سے معاملہ چھپانے کی کوشش کی جاتی رہی اعلی حکام نے چیف ایگزیکٹو آفسیر سمیت 5افراد کو معطل کر کے تحقیقات شروع کر دیں معطل ہونیوالوں میں مبینہ تشدد کا نشانہ بنانے والی ٹیچرز بھی شامل ہیں معلوم ہو اہے کہ فیکٹری ایریاء شاہدرہ کی نویں کلاس کی طالبہ فجر نور کو چند روز قبل سبق نہ یاد کرنے پر ٹیچر ریحانہ کوثر و بشریٰ طفیل نے مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ اور دھکا دیا جس سے فجر شدید زخمی ہو گئی اور اسے فوری ہسپتال پہنچایا گیا جہاں اس کا علاج جاری ہے اہل خانہ نے سیکرٹری سکولز ڈاکٹر اللہ بحش ملک کو درخواست دی جس پر فوری سیکرٹری سکولز ایجوکیشن ڈاکٹر اللہ بخش ملک اور سپیشل سیکرٹری رانا حسن اختر خان معاملے کا پتہ چلتے ہی ہسپتال پہنچ گئے ، انہوں نے طالبہ کی عیادت کی اور ان سے معاملے کی تفصیلات حاصل کیںاور ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر احسان ملک، طیبہ بٹ ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر نغمانہ ارشاد( ہیڈ مسٹرس) اور مار پیٹ میں ملوث ریحانہ کوثر و بشریٰ طفیل کو معطل کر دیا ہے۔