یوم تکبیر جوش و جذبہ کیساتھ منایا گیا‘ ایٹمی پروگرام سے خطے میں طاقت کا توازن قائم ہوا : نوازشریف

29 مئی 2017

اسلام آباد(اے این این) 1998 میںچاغی کے مقام پر کئے گئے تاریخی ایٹمی تجربات کی یاد میں ملک بھر میں یوم تکبیر جوش و جذبے کے ساتھ منایا گیا ۔28مئی کوایٹمی صلاحیتوں کے مظاہرے کے ساتھ پاکستان دنیا کی ساتویں اور امت مسلمہ کی پہلی ایٹمی طاقت بن گیا تھا۔ایٹمی تجربات نے پاکستان کادفاع ناقابل تسخیربنادیا۔اس موقع پر ملک کی ترقی اور خوشحالی، آئین کی بالادستی، قوم کی خوشحالی اور دہشت گردی کے خاتمے کیلئے خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔حکمران جماعت مسلم لیگ(ن) اور مختلف تنظیموں کی جانب سے بھی اس دن کی اہمیت کواجاگر کرنے کیلئے خصوصی پروگراموں اورتقریبات کااہتمام کیا گیا تھا ۔پاکستان ٹیلی ویژن اور ریڈیو پاکستان یوم تکبیر کے حوالے سے خصوصی پروگرام نشر کئے گئے ۔دریں اثناء وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان کا ایٹمی پروگرام خطے میں امن کی علامت ہے، پاکستان کے ایٹمی پروگرام سے جنوبی ایشیا میں طاقت کاتوازن قائم ہواہے اور ہمارے ایٹمی طاقت بننے کی وجہ سے خطے کے چھوٹے ممالک نے سکھ کا سانس لیا۔یوم تکبیر کے موقع پر اپنے پیغام میں وزیراعظم نے کہا اللہ کے بھروسے اورعوام کی تائید پر چیلنجز کو قبول کیا اور 19 سال پہلے پاکستان کا دفاع ناقابل تسخیر بنایا۔ ان کا کہنا تھا کہ قوم ایٹمی قوت بننے میں کردار ادا کرنے والی تمام شخصیات کی شکر گزار ہے۔ قومیں عزم و استقلال اور وژن کے ساتھ آگے بڑھتی ہیں اور دور اندیش قیادت سے ملک زینہ بزینہ ترقی کی منازل طے کرتے ہیں جب کہ غیر سنجیدہ اور بصیرت سے عاری قیادت سے مستقبل خدشات میں گھر جاتا ہے۔وزیراعظم نے کہا موجودہ دور میں کسی قوم کا دفاع معاشی استحکام سے جدا نہیں اور آج اسی جذبے سے معیشت کو بھی مضبوط اور مستحکم بنایا جا رہا ہے۔ اللہ تعالی کی نصرت سے معاشی ترقی کا سفر بھی تیزی سے جاری ہے۔پاکستان کی معیشت ایٹمی دھماکوں کی طرح تیزی سے ترقی کر رہی ہے ۔یوم تکبیر کی طرح قوم معاشی طور پر ایشین ٹائیگر بننے کے لئے بھی یکسو ہے۔ انہوں نے کہا ساری دنیا پاکستان کی مثبت اقتصادی پالیسیوں کی تعریف کر رہی ہے جب کہ سی پیک سے خطے میں خوشحالی کے نئے سفر کا آغاز ہو گا۔وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ پاکستان کے ایٹمی پروگرام نے جنوبی ایشیا میں طاقت کا توازن پیدا کیا اور پاکستان کے ایٹمی قوت بننے سے خطے کے چھوٹے ملکوں نے سکھ کا سانس لیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کا ایٹمی پروگرام خطے میں امن کی علامت ہے جبکہ ترقی کے سفر میں جنوبی ایشیا اور خطے کے دیگرملکوں کو بھی شامل کرنا چاہتے ہیں، چاہتے ہیں کہ سب مل کرخطے کے عوام کو خوش حال بنائیں، انصاف اور معاشی ترقی خطے میں امن کی ضمانت بن سکتے ہیں۔
یوم تکبیر