سحری کے وقت بجلی کا بڑا بریک ڈائون قابل مذمت ہے: ضیاء عباس

29 مئی 2017

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سینئر سیاستدان اور مسلم لیگ کے سابق سیکرٹری جنرل سید ضیاء عباس نے کہا ہے کہ رمضان المبارک کے پہلے روز ہی حکومت اور شہری اداروں کی گڈ گورننس کی قلعی کھل گئی۔ کراچی اور حیدرآباد سمیت سندھ کے 13 اضلاع کے کروڑوں افراد کو رمضان کی پہلی سحری اندھیرے میں کرنا پڑی جبکہ عوام دوست بجٹ بنانے کا دعویٰ کرنے والی حکومت کی مہربانی سے اشیاء خورد و نوش خاص طور پر پھلوں کی قیمتیں آسمان پر پہنچ گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے رمضان المبارک میں لوڈشیڈنگ نہ کرنے کے اعلان کے باوجود پہلی رمضان المبارک کو ہی سحری کے وقت بجلی کا بڑا بریک ڈائون افسوسناک ہی نہیں قابل مذمت بھی ہے۔ سید ضیاء عباس نے کراچی میں کے الیکٹرک کی کارکردگی کو بھی شدیدتنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ حیلوں بہانوں سے بجلی کے نرخ بڑھانے اوراووربلنگ کے باوجود بھی اگر کراچی کے شہریوں کو بجلی کے بغیر ہی رہنا ہے تو کے الیکٹرک کابوریا بستر گول کردینا چاہئے۔