’’ کے الیکٹرک ‘‘ نے حکومتی سبسڈی کا صلہ پہلی سحری میں دیدیا،یوسف قصوری

29 مئی 2017

کراچی (نیوز رپورٹر) مرکزی جمعیت اہلحدیث سندھ کے امیر مفتی یوسف قصوری اور دیگر رہنمائوں مولانا ابراہیم طارق ، سید عامر نجیب ، محمد اشرف قریشی ، مولانا افضل سردار ، قاری خلیل الرحمن جاوید نے کہا ہے کہ ’’ کے الیکٹرک ‘‘ نے بجٹ میں دی گئی حکومتی سبسڈی کا صلہ پہلی سحری میں شہریوں کو اذیت میں مبتلا کر کے دیا ۔ انھوں نے کہا کہ کے الیکٹرک کی بے حس انتظامیہ اور بے رحم مالکان کراچی کے شہریوں پر عذاب کی طرح مسلط ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گذشتہ روز مدرسہ عثمان بن عفان قیوم آباد میں مجلس شوریٰ کے اجلاس و دعوت افطار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ مفتی یوسف قصوری و دیگر رہنمائوں نے کہا کہ ’’ کے الیکٹرک ‘‘ مالکان سے رینجرز کے ذریعے تفتیش کرائی جائے کیونکہ معلوم یہ ہوتا ہے کہ ’’ کے الیکٹرک ‘‘ کسی سیاسی ایجنڈے کے تحت کراچی کے شہریوں کو ملک کے مستقبل سے مایوس کر رہی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ بجلی کے بحران میں حکومتی کرپشن کا بھی دخل ہے حکومتی اہلکار نجی کمپنیوں سے ساز باز کر کے ان کی نا اہلیوں پر پردہ ڈالتے ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ ’’ کے الیکٹرک ‘‘ رمضان کے مقدس و مبارک مہینے کا احترام کرتے ہوئے سحری ، افطاری اور نماز تراویح کے موقع پر لوڈ شیڈنگ سے گریز کرے ورنہ روزے داروں کی بد دعائیں کے الیکٹرک مالکان کو لے ڈوبیں گی ۔