شیخ عبدالمجید سندھی ہماری ز ندہ تاریخ کا روشن باب ہیں‘ نذیرا حمد چنا

29 مئی 2017

کراچی(ا سٹاف رپورٹر) شیخ عبدالمجید سندھی ہماری زندہ تاریخ کا روشن باب ہیں‘ وہ ایک راسخ العقیدہ مسلمان تھے‘ تحریک خلافت و تحریک پاکستان میں ان کی شاندارخدمات ناقابل فراموش ہیں۔ ان تاثرات کا اظہارمنصور ہلاج فائونڈیشن اورتحریک تکمیل پاکستان کے زیر ا ہتمام مقامی تعلیمی ادارے میں منعقدہ یادگاری نشست میں مقررین نے کیا۔ تقریب کی صدارت ممتاز دانشورنذیرا حمد چنا نے کی جبکہ محفوظ النبی خان‘ امین مگسی نے بھی اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ صدر نشین نذیر احمد چنا نے کہا کہ 1938ء میں تقسیم ہند کے حوالے سے سندھ مسلم لیگ کی قرارداد کو پیش کرنے کا سہرا شیخ عبدالمجید سندھی کے سر ہے جس کی تائید عبداللہ ہارون و دیگر اکابرین نے بھی کی تھی۔ انہوں نے کہاکہ مئی کا مہینہ اپنے جلو میں شیخ عبدالمجید سندھی کے علاوہ مولانا حسرت موہانی اور چوہدری خلیق الزماں جیسے نامورقومی اکابرین کے ا یام وفات بھی ہے‘ انہوں نے اس امر پر افسوس کاا ظہار کیا کہ برصغیر کی مسلم تاریخ سے ان اکابرین کے کارناموں کو نسل نو تک اس اندازمیں نہیں پہنچایا جارہا ہے‘ جس کا یہ متقاضی ہے۔ محفوظ النبی خان نے کہاکہ مولانا محمد علی جوہر کی قیادت میںبرصغیر کی تاریخ میں سب سے بڑی عوامی تحریک‘ تحریک خلافت میں شیخ عبدالمجید سندھی کا کردار ان کی بین الاسلامی اتحاد کی فکرکی عکاسی کرتا ہے۔