کراچی سمیت سندھ بھر میں پہلی سحری پر بجلی کا طویل بریک ڈاو¿ن

29 مئی 2017
کراچی سمیت سندھ بھر میں پہلی سحری پر بجلی کا طویل بریک ڈاو¿ن

کراچی/ حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر/ نامہ نگاران) کراچی سمیت سندھ بھر میں بجلی کے طویل بریک ڈاﺅن کے باعث رمضان المبارک کی پہلی سحری میں عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ ا۔ کراچی میں کے الیکٹرک کے متعدد گرڈ سٹیشنز متاثر ہوگئے جس کے باعث بڑا بریک ڈاﺅن ہوگیا۔ بریک ڈاﺅن کے نتیجے میں ناظم آباد، گلشن اقبال، پی ای سی ایچ ایس، گلستان جوہر، نارتھ کراچی، سکیم 33، لانڈھی، کورنگی، گارڈن، شو مارکیٹ، رامسوامی، رنچھوڑ لائن، عثمان آباد، کیماڑی، کھارادر، میٹھادر، لی مارکیٹ، لیاری کے علاقوں میں بجلی معطل ہو گئی جبکہ شاہ فیصل کالونی، ملیر، قائد آباد میں بھی بجلی کی آنکھ مچولی جاری رہی۔ بجلی کی بندش کے باعث شہریوں کو رمضان المبارک کی پہلی سحری میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا تھا کہ ایکسٹرا ہائی ٹینشن ٹرپنگ سے بجلی کی فراہمی میں تعطل آیا، صبح چھ بجے کے بعد مختلف علاقوں میں بجلی بحا ل ہوگئی۔نیشنل گرڈ سے جیسے ہی سپلائی ملے گی کراچی میں بجلی بحال ہوجائے گی ۔بجلی کی عدم فراہمی سے واٹر بورڈ کے پمپنگ سٹیشنز میں بھی لاکھوں گیلن پانی پمپ نہ کیا جاسکا جس کی وجہ سے شہر کے متعدد علاقوں میں پانی کی قلت بھی پیدا ہوگئی،شہری نے موم بتی کی روشنی میں سحری کی۔دوسری جانب اندرون سندھ میں حیدرآباد، نواب شاہ، میرپورخاص ڈویژن کے 14 ڈسٹرکٹ میں بجلی بند ہوگئی، بریک ڈاﺅن کے باعث دادو، ٹھٹہ، بدین، جامشورو، ٹنڈو محمد خان میں بھی بجلی کی فراہمی معطل رہی۔ ٹنڈو جام سے نامہ نگار کے مطابق سندھ بھر میں پہلی سحری اور افطار پر بھی بجلی اور گیس غائب ہو گئی جس سے روزہ دار انتہائی پریشان ہو گئے۔ گیس نہ ہونے کے باعث بہت سے لوگوں نے بغیر سحری کے روزہ رکھ لیا۔ تفصیلات کے مطابق سحری اور افطاری میں لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کے حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ٹنڈو جام میں رات 3 بجے لائٹ فنی خرابی کے باعث بند ہوئی تو دن کے 3 بجے لائٹ دوبارہ آئی اس کے ساتھ گیس کا انتہائی کم پریشر ہونے کی وجہ سے لوگ سحری میں شدید مشکلات سے دوچار ہوئے اور گیس نہ ہونے کے باعث بہت سے لوگوں نے بغیر سحری کے روزہ رکھا۔ عوام کو اس صروتحال پر شدید پریشانی سے دوچار کرنا ہونا پڑا۔ عوام کا کہنا ہے کہ جب بجلی کی کمپنیاں عوام کو صحیح بجلی فراہم نہیں کر پا رہیں تو انہیں 65 ارب روپے کی سبسڈی کیوں دی گئی ہے جبکہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے مساجد میں سولر سسٹم لگانا شروع کر دیا ہے تاکہ رمضان المبارک میں لوگوں کو مساجد میں پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے گزشتہ رات شہر قائد سمیت سندھ کے مختلف شہروں میں بجلی کی طویل اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا نوٹس لیتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے سندھ کے عوام کے ساتھ زیادتی کی جارہی ہے۔کراچی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ کے الیکٹرک، حیسکو اور سیسکو نے رمضان میں لوڈ شیڈنگ میں کمی اور سحر و افطار کے اوقات میں میں لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی لیکن اس کے باوجود گزشتہ رات کراچی سمیت سندھ کے کئی شہروں میں طویل اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کر کے عوام کو پریشان کیا گیا۔ مراد علی شاہ نے کہا کہ وفاقی حکومت کا سندھ کے ساتھ رویہ ٹھیک نہیں اور وفاق کی جانب سے صوبے کے عوام کے ساتھ زیادتی کی جا رہی ہے۔ مراد علی شاہ نے وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف کو خط ارسال کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ میں نے 24مئی کو ایک ای میل بھی روانہ کی تھی جس میں ٹرانسمیشن نیٹ ورک کے قابل بھروسہ نہ ہونے کی نشاندہی کی گئی تھی ۔
بجلی بریک ڈاﺅن

لاہور( نامہ نگاران ) حکومتی اعلانات دھرے کے دھرے رہ گئے ، سحر و افطار میں بھی بجلی کی لوڈشیڈنگ جاری، مساجد اور گھروں میں وضو کیلئے پانی تک ختم ہو گیا ساہیوال میں گرمی اتوار کے روز پھر 2افراد جاں بحق جبکہ درجنوں زخمی ہو گئے ۔ اسلام آباد سے اے این پی کے مطابق وزارت پانی و بجلی نے دعویٰ کیا کہ ملک میں بجلی کی پیداوار 17ہزار چار سو میگا واٹ کی ریکارڈ سطح عبور کر گئی ہے۔ پانی و بجلی کی وزارت کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ سحری اور افطار کے اوقات میں ملک کے تمام حصوں میں بلا تعطل بجلی فراہم کی جا رہی ہے۔ ملک میں کہیں بھی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نہیں ہو رہی ۔ جن علاقوں میں بجلی چوری ہوتی ہے وہاں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ زیادہ ہے۔ ساہیوال سے نامہ نگار کے مطابق ضلع ساہیوال میں گرمی کی شدت برقرار رہی لولگنے اور شدید گرمی سے مزید2افراد جاں بحق ہو گئے ۔ درجنوں افراد کو گرمی کے سبب بیہوشی کی حالت میں سول ہسپتال داخل کر ا دیا گیا درجہ حرارت 45ڈگری سینٹی گریڈ تک ریکارڈ کیاگیا۔ پاک پتن سے نامہ نگار کے مطابق حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ، ماہ رمضان کے پہلے روز ہی میپکو کی بد ترین لوڈ شیڈنگ جاری، روز ہ دار پریشانی میں مبتلا ، گرمی میں لوڈ شیڈنگ سے شہری شدید اذیت سے دو چار شہریوں نے حکومت کی طرف سے ماہ رمضان میں لوڈ شیڈنگ کے خاتمہ کا اعلان کیا گیا تھا لیکن اس پر کوئی عمل درآمد نظر نہیں آ رہا، حکومت ایسے اعلان ہی کیوں کرتی ہے جس پر وہ عمل نہیں کروا سکتی ہے۔ گگومنڈی سے نامہ نگار کے مطابق گزشتہ روز نماز تراویح اور سحری کے وقت میپکو نے حکومتی اعلان کی خلاف ورزی کرتے گگو منڈی اور گردو نواح میں بجلی کی سپلائی بند کر دی رات 8بجے سے9بجے تک اور صبح سحری کے وقت ڈھائی بجے سے 4بجے تک بند رہی جس کے نتیجہ میں روزہ داروں کونماز تراویح اور سحری کرنے میں سخت پریشانی کا سامنا رہا ۔ مزید براں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاج کے دوران مالا کنڈ میں توڑ پھوڑ کا معاملہ ایم این اے جنید خان اور مشیر وزیراعلیٰ سمیت 7 کارکن ضمانت پر رہا ہو گئے۔ پنڈی بھٹیاں سے نامہ نگار کے مطابق رمضان المبارک میں بھی لوڈشیڈنگ زیادہ ہوئی۔ گرمی سے روزہ داروں کا تمام دن برا حال رہا۔ نارنگ منڈی سے نامہ نگار کے مطابق بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ نے روزے داروں کا برا حال کردیا جس سے درجنوں روزہ دار بے ہوش ہوگئے۔ اسلام آباد سے وقائع نگار خصوصی کے مطابق ترجمان وزارت پانی و بجلی نے کہاکہ ملک کے زیادہ تر حصوں میں سحر کے دوران بجلی کی فراہمی بلا تعطل جاری رہی۔ سحر کے وقت 97 فیصد شہری اور 85 فیصد دیہی علاقوں میں بجلی کی فراہمی بلا تعطل جاری رہی ۔ حیسکو کے ٹرپنگ والے علاقے میں 2 گھنٹے کے اندر بجلی بحال کر دی گئی ‘ ملک میں بجلی کی پیداوار 17400 میگا واٹ رہی ۔ اتوار کو ترجمان وزارت پانی و بجلی نے اپنے بیان میں کہا کہ ملک کے زیادہ تر حصوں میں سحر کے دوران بجلی کی فراہمی بلا تعطل جاری رہی۔ سحر کے وقت 97 فیصد شہری اور 85 فیصد دیہی علاقوں میں بجلی کی فراہمی بلا تعطل جاری رہی ۔ حیسکو کے ٹرپنگ والے علاقے میں 2 گھنٹے کے اندر بجلی بحال کی گئی۔ وزارت پانی و بجلی کے مطابق ہفتہ شام 6:30 سے صبح 4 بجے تک ملک میں زیرو لوڈ شیڈنگ رہی۔ ملک میں بجلی کی پیداوار 17400 میگا واٹ رہی۔ ادھر محکمہ موسمیات ن کہا ہے کہ رمضان المبارک کے پہلے پندرہ روز موسم گرم اور خشک رہے گا تاہم اگلے پندرہ روز میں بارشوں کے دو یا تین سلسلوں سے درجہ حرارت میں کمی آئیگی جس سے روزہ داروں کو سہولت حاصل ہوگی۔
لوڈشیڈنگ

مری بکل دے وچ چور ....

فاضل چیف جسٹس کے گذشتہ روز کے ریمارکس معنی خیز ہیں۔ کیا توہین عدالت کا مرتکب ...