امریکی صدر ٹرمپ کا افطار ڈنر منسوخ کرنا مسلمانوں کے خلاف کھلاتعصب ہے‘ حنیف طیب

29 مئی 2017

کراچی ( نیوز رپورٹر)نظام مصطفی پارٹی کے سربراہ حاجی محمدحنیف طیب نے کہاہے کہ امریکہ جیسے آزادی خیال ملک میں بیس سالوں سے امریکی مسلمانوں کے لئے بطورخاص امریکی صدرکی جانب سے رمضان المبارک کے بابرکت مہینے میں مسلم رہنماﺅں کےلئے دعوت افطارکا انعقادخود انکے مفاد میں اورامریکی مسلمانوں کا دل جیتنے کی کوشش تھا لیکن امریکہ کے موجودہ صدر ڈونلڈٹرمپ نے اس روایت کو ختم کردیا جو مسلمانوں کے خلاف تعصب پرمبنی رویہ ہے ۔انہوںنے کہاکہ حال ہی میں سعودی عرب میں ہونے والی اسلامی وامریکی سربراہ کانفرنس میں ٹرمپ نے صرف اپنے ملکی مفادکاخیال کیاجبکہ کشمیر میں ڈھائے جانے والے بھارتی مظالم کاکوئی تذکرہ نہیں کیاگیانہ ہی وزیراعظم پاکستان کی جانب سے اس ظلم پرکوئی صدابلندکی گئی۔بلکہ پاکستان میں بھارت کی جانب سے کرائی جانے والی دہشت گردی کابھی کوئی ذکرنہیں کیاگیاجس میں ہزارہاپاکستانی فوجی وسول عوام شہیدہوئے۔