”بے ہنگم ترقیاتی منصوبوں سے منٹوں کا سفر گھنٹوں میں طے ہونے لگا“

29 مئی 2017

کراچی( اسٹاف رپورٹر)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ترجمان نے کہا ہے کہ شدید گرمی اور مسلسل ٹریفک جام نے عوام کو سخت ذہنی مریض بنا دیا ہے۔ صوبائی حکومت کو شدید گرمی میں روزہ داروں کا بھی کوئی احساس نہیں ہے رمضان المبارک میں شام کے اوقات میں ٹریفک کی انتہائی سنگین صورت حال ابھی سے عیاں ہے صورت حال اتنی خراب ہے کہ ٹریفک پولیس اہلکار اپنی انتھک محنت کے باوجود ٹریفک کی روانی برقرار نہیں رکھ پاتے ،اپنے ذمہ داریوں سے بے پرواہ حکا م بالا شام کے اوقات میں روزہ داروں کو شاہراہوں پر بد ترین ٹریفک جام کی تکلیف سے نا آشنا ہیںناقص حکمت عملی کے تحت شہر بھر شاہراہوں پر تعمیراتی اور انڈر پاسز کا کام شروع کردیا گیا ہے بغیر کسی متبادل راستے کے تعمیراتی کام کا اغاز انتہائی افسوس ناک ہے کئی مہینوں نے سے جاری کاموں کی رفتار انتہائی سست ہے شہر میں گھنٹوں ٹریفک جام معمول بن چکا ہے انتہائی ناقص پلاننگ کے تحت شروع کیے گئے منصوبوں کے باعث رات دیر تک ٹریفک جام رہنے لگا ہے منٹوں کا سفر گھنٹوں پر محیط ہوچکا ہے کئی برس سے ملیر پندرہ کا فلائی اور اب تک مکمل نہیں کیا جاسکا ہے متعلقہ محکموں کی نااہلی کی وجہ ست یونیورسٹی روڈ کی تعمیر اب تک مکمل نہیں کی جاسکی ہے شاہراہ فیصل پر چوبیس گھنٹے ٹریفک جام رہنے لگا ہے، پچھلے سال تعمیر کے گئے ملیر ہالٹ فلائی کےے نیچے کی سڑکیں ابھی تک مکمل نہیں کی جاسکی ہیں۔