اور پاکستان ایٹمی قوت بن گیا

29 مئی 2017

پاکستان کی تاریخ میں 28 مئی 1999ءکا دن ہمیشہ یاد رکھا جائے گا کیونکہ اس دن پاکستان کے وزیراعظم میاں نواز شریف نے بھارت کے ایٹمی دھماکوں کے جواب میں چاغی کے مقام پر ایٹمی دھماکے کر کے پوری دنیا کو بتایا کہ پاکستان ایک ایٹمی قوت بن چکا ہے۔ 28 مئی 1999ءکے دن پاکستان اسلامی دنیا کا پہلا اور جنوبی ایشیاءکا تیسرا ایٹمی ملک بنا تھا۔ اس لئے 28 مئی کا دن قوم بڑے فخر اور جذبے کے ساتھ مناتی ہے۔ ہم ایٹمی قوت ایک دن میں نہیں بنے۔ ایٹمی قوت بننے کے لئے ہمارے ملک کے ایٹمی سائنسدانوں نے دن رات محنت کر کے اس ملک کوا یٹمی قوت بنایا ہے جس میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان اور ڈاکثر ثمر مبارک مند اور ڈاکٹرمجید نظامی جیسے لوگ شامل تھے۔ پاکستان ایٹمی قوت تو بن گیا لیکن دوسرے ممالک کو یہ بات ابھی تک ہضم نہیں ہوتی۔ وہ ہر وقت ہمارے ملک کے ایٹمی پروگرام کو رول بیک کرنے کے بارے میں سوچتے رہتے ہیں جب پاکستان ایٹمی قوت بنا تو اس وقت بھی میاں محمد نواز شریف پاکستان کے وزیراعظم تھے۔ میاں نواز شریف نے اس وقت کے امریکی صدر بل کلنٹن کا ٹیلی فون تک سننے سے انکار کر دیا تھا دوسری طرف امریکہ نے نہ صرف پاکستان بلکہ میاں نواز شریف کے لئے بھی ڈالروں کے منہ کھول دئیے تھے لیکن میاں نواز شریف ہی پاکستان کا واحد لیڈر ہے جو کبھی بھی اپنے ملک کی عوام کے خلاف اور مخالف سوچ نہیں رکھتے۔
پوری قوم کا ایٹمی ہیرو آج بھی نواز شریف ہے جو ذاتی مفادات کی بجائے ملک اور قوم کا مفاد مقدم رکھتے ہوئے قوم کی خدمت کر رہا ہے میاں نواز شریف جیسے لیڈر پاکستان میں بہت کم پیدا ہوتے ہیں۔ چین پاکستان کا بہت اچھا دوست ملک ہے چین اربوں ڈالر کی خطیر رقم پاکستان میں خرچ کر رہا ہے جس کا براہ راست فائدہ عوام کو ہو گا۔ میاں نواز شریف نے ایسے کام شروع کئے ہیں کہ آئندہ چند سالوں میں ملک میں بجلی بھی ہو گی‘ گیس بھی ملے گی اور موٹر وے بھی بنے گا۔ 14 اگست 1947ءکو ہمارا ملک آزا ہوا تھا۔ لیکن ہم لوگ محفوظ قوم 28 مئی 1998ءمیں بنے تھے۔ 1998ءمیں پاکستان نے نہ صرف ایٹمی دھماکے کئے بلکہ 6 اپریل 1998ءکو پہلا زمین سے زمین تک مار کرنے والا 1500 کلومیٹر تک بیلسٹک میزائل غوری ۔1 کا کامیاب تجربہ کیا تھا اور اس کے بعد 14 اپریل 1999ءکو غوریII- کا بھی کامیاب تجربہ کیا تھا۔ ان سب کا کریڈٹ میاں نواز شریف اور محسن پاکستان ڈاکٹر عبدالقدیر خان کو جاتا ہے یہ نواز شریف حکومت کی کوششیں ہیں کہ ریلوے چل رہا ہے جو کہ چند سال پہلے بند ہونے کو تھا لیکن آج اربوں روپے کما کر اپنی کھوئی ہوئی ساکھ بحال کر رہا ہے پی آئی اے جس کے پاس چند طیارے رہ گئے تھے اب تقریباً چالیس طیاروں کا بیڑہ بن چکا ہے۔ ملک میں ہزاروں میل لمبی موٹر وے بن رہی ہیں۔ پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کا تھا جو کہ چند مہینوں میں تقریباً حل ہو جائے گا۔ اس وقت ملک میں تقریباً 10000 میگاواٹ بجلی بنانے کے کارخانوں پر کام بہت تیزی سے ہو رہا ہے۔ پٹرول جو چند سال پہلے 123 روپے پر تھا اب 76 روپے پر فروخت ہورہا ہے ساہیوال کول پاور پلانٹ اپنی مقررہ مدت سے پہلے ہی کام شروع کر چکا ہے‘ سی پیک کے تحت مکمل ہونے والا یہ پہلا منصوبہ ہے عوام کی خوشحالی قریب ہے اور انشاءاﷲ جلد ہی پاکستان ایک پرامن ملک بن جائے گا۔ کراچی کے حالات جو کہ بہت زیادہ خراب تھے دہشت گردی عروج پر تھی بوری بند لاشیں ملنا روز کا معمول تھا اور اب یہ سلسلہ بند ہو گیا ہے اب حالات بہت پرامن ہیں۔ یہ نواز شریف کی حکومت ہی ہے کہ جو کراچی سے لاہور موٹر وے بنا رہی ہے۔ میاں نواز شریف جو ترقیاتی کام کروا رہے ہیں ان کا فائدہ ہماری آنے والی نسلوں کو ضرور ہو گا۔ قائداعظم نے پاکستان بنایا ہے اور آج نواز شریف پاکستان ترقی کے لئے بھرپور کوششیں کر رہے ہیں پاکستان نواز شریف کے فیصلوں سے ترقی کرے گا اور آج ہمیں ایسے لیڈر کی ضرورت ہے جو پاکستان کو قائداعظم اور علامہ اقبال کا پاکستان بنائے ۔ میاں نواز شریف ہی اس ملک کو ترقی کی طرف لے کر جا رہے ہیں اور یہ وہ لیڈر ہے جس کے ساتھ پاکستان کی کروڑوں عوام ساتھ ہیں۔