اچھے لگتے ہیں....رخشندہ حبیب جالب

29 مارچ 2010
جھوٹے وعدے کرتے لیڈر کتنے اچھے لگتے ہیں
لمحہ لمحہ گھومتے لوٹے اچھے لگتے ہیں
رنگ رنگ کی تقریروں کے ماہر ہیں یہ جلسوں میں
جلسوں میں ٹیں ٹیں کرتے طوطے اچھے لگتے ہیں
جھوٹے لیڈر باتوں کی پہچان بنے
ووٹ کی خاطر روتے دھوتے اچھے لگتے ہیں
جھوٹے لیڈر چڑیا گھر کی شان بنیں
چڑیا گھر میں بندر، کھوتے اچھے لگتے ہیں
کتنے کنبے لوٹ رہے ہیں فقرا کو
نانا، مامے، چاچے، پوتے اچھے لگتے ہیں
قوم کی دولت کھا جاتے ہیں مل جل کر
دیگ کے چاول لوٹتے کڑچھے اچھے لگتے ہیں