امریکہ نے پاکستان مےں ڈرون حملوں کو پھر جائز قرار دے دیا

29 مارچ 2010
واشنگٹن (جی این آئی) امریکی حکومت نے پھر پاکستان میں شدت پسندوں پر کیے جانے والے جاسوسی طیاروں یا ڈرون کے حملوں کو قانونی طور پر جائز قرار دینے کی کوشش کی ہے۔ سٹیٹ ڈپارٹمنٹ کے مشیرِ قانون ہیرالڈ کوہ نے امریکی سوسائٹی آف انٹرنیشنل لاءکے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بین الاقوامی اصولوں کے مطابق یہ امریکہ کا قانونی حق ہے کہ وہ اپنی حفاظت کے لئے شدت پسندوں کے خلاف طاقت کا استعمال کرے۔ انہوں نے کہا کہ اوباما انتظامیہ نے ہمیشہ یہ کوشش کی ہے کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ دہشت گردوں کے خلاف جنگ قانونی حدود مےں رہ کر لڑی جائے۔ 9/11 کے بعد امریکہ شدت پسندوں کے ساتھ مسلح جنگ کر رہا ہے۔ اس لیے جاسوس طیاروں کے کیے گئے ڈرون حملوں کو ماورائے قانون ہلاکتوں کے زمرے میں شمار نہیں کیا جا سکتا۔ گزشتہ چند دنوں سے جاسوس طیارے سے کیے جانے والے حملوں کو امریکہ میں بہت تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔