امریکہ، برطانیہ، سعودی عرب، بھارت، ایران، افغانستان اور دیگر ممالک کا اظہار افسوس

29 جولائی 2010
اسلام آباد(نیوز ایجنسیاں) اسلام آباد میں طیارے کے حادثے پر امریکہ ، ایران ، افغانستان ، سعودی عرب ، برطانیہ ، بھارت ، روس، آذربائیجان کی طرف سے اظہار افسوس کیا گیا ہے۔ پاکستان میں امریکی سفیر این ڈبلیو پیٹرسن اور ایران کے سفیر ماشاءاللہ شاکری نے واقعہ پر گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے الگ الگ بیان میں کہا ہے کہ وہ جاں بحق ہونے والے مسافروں اور عملہ کے ارکان کے اہلخانہ کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں صدر زرداری کو امریکی صدر بارک اوباما اور افغان صدر حامد کرزئی نے فون کیا اور واقعہ پر دکھ کا اظہار کیا۔ فرانس کے وزیر خارجہ برنارڈ کوچز نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ وہ اس غم کے موقع پر وہ پاکستانی حکام اور عوام سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہیں۔ علاوہ ازیں بھارتی وزیراعظم من موہن سنگھ نے پاکستانی ہم منصب یوسف رضا گیلانی کے نام تعزیتی پیغام میں طیارے حادثے کے باعث انسانی جانوں کے نقصان پر بھارتی حکومت اور عوام کی جانب سے پاکستانی حکومت عوام بالخصوص متاثرہ خاندانوں سے ہمدردی کا اظہار کیا۔ قبل ازیں وزیر خارجہ ایس ایم کرشنا نے پاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی کے نام تعزیتی پیغام میں بھارتی حکومت اور عوام کی جانب سے پاکستانی حکومت اور عوام بالخصوص متاثرہ خاندانوں کے ساتھ دلی ہمدردی کا اظہار کیا۔ ایران کے صدر احمدی نژاد افغانستان کے صدر حامد کرزئی، روس کے صدر دمتری میدوف، آذربائیجان کے صدر اور یورپین کونسل کے صدر ہرمن وان رمپیوئی نے صدر آصف زرداری اور پاکستانی عوام سے اپنے گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ بدھ کو افغان صدر حامد کرزئی نے صدر آصف علی زرداری سے ٹیلی فون پر اس واقعہ پر تعزیت کا اظہار کیا۔ صدر زرداری کو گزشتہ رات امریکی صدر بارک اوباما نے ٹیلی فون کیا۔ امریکی صدر نے حکومت پاکستان کو کسی بھی قسم کی معاونت فراہم کرنے کی پیشکش کرتے ہوئے حادثے میں جاں بحق افراد کے اہلخانہ کے ساتھ بھی ہمدردی کا اظہار کیا۔