ملک بھر میں دریاؤں میں سیلابی ریلوں کا خطرہ  بڑھ گیا ہے، ایک روز میں تربیلا میں پانی کی آمد میں ایک لاکھ اسی ہزار اور منگلا میں ایک لاکھ پانچ سو کیوسک کا اضافہ ہوا ہے۔

29 جولائی 2010 (17:49)
فلڈ وارننگ کیمپ کے مطابق مرالہ، خانکی،اور قادرآباد میں پانی کی آمد بڑھ جانے کی وجہ سے سیلاب کاخطرہ بڑھ رہا ہے۔ ادھرارسا کے مطابق تربیلا میں پانی کی آمد اضافے کے ساتھ چار لاکھ انسٹھ ہزار کیوسک اور اخراج تین لاکھ اٹھاون ہزار تین سوکیوسک ہے۔ منگلا میں پانی کی آمد ایک لاکھ ستر ہزار ایک سو اٹھاسی کیوسک اور اخراج سینتالیس ہزار پینتالیس کیوسک ہے۔ کالاباغ کے مقام پر پانی کی آمد چار لاکھ بارہ ہزار چار سو سولہ کیوسک ،اخراج چار لاکھ دس ہزارچار سوسولہ کیوسک ہے۔ دریائے سندھ میں چشمہ کے مقام پر پانی کی آمد تین لاکھ پینتالیس ہزار تین سو سترہ کیوسک اور اخراج پانچ لاکھ سات ہزار نوسوچار کیوسک ہے۔ تونسہ کے مقام پر پانی کی آمد دولاکھ ستر ہزار چار سو اکتالیس کیوسک اور اخراج دولاکھ اٹھاون ہزار نوسواکتالیس کیوسک ہے۔