پاکستان، بھارت تعلقات میں کسی بڑی تبدیلی کا امکان نہیں: دفاعی ماہرین

29 جنوری 2016

اسلام آباد (سپیشل رپورٹ) دفاعی امور کے ماہرین اور سکالروں کی رائے میں پاکستان اور بھارت کے دوطرفہ تعلقات میں کوئی بڑی تبدیلی رونما ہونے کے امکانات نہیں۔گزشتہ روز یہاں تھنک ٹینک سٹرٹیجک ویژن انسٹی ٹیوٹ کے زیراہتمام منعقدہ سیمینار میں اظہار خیال کرتے ہوئے دفاعی امور کے ماہرین نے حکومت کو مشورہ دیا کہ وہ بھارت کے ساتھ تعلقات میں احتیاط برتے۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے سابق سیکرٹری دفاع لفٹیننٹ جنرل (ر) آصف یاسین ملک نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے تعلقات نشیب و فراز کا شکار رہے ہیں ان تعلقات میں کوئی انقلابی تبدیلی مستقبل قریب میں آنے کا امکان نہیں۔ بھارت پاکستان کے ساتھ ’’چوہے اور بلی‘‘ کا کھیل کھیل رہا ہے۔ سابق سیکرٹری دفاع لفٹیننٹ جنرل نسیم لودھی نے کہا کہ پاکستان اور بھارت تاریخ کے پھندے میں پھنسے ہوئے ہیں مستقبل قریب میں دونوں ملکوں میں تعلقات میں بہتری کے امکانات کا امکان نہیں۔ سٹرٹیجک ویژن انسٹی ٹیوٹ کے چیئرمین ڈاکٹر ظفر اقبال چیمہ نے کہاکہ بھارت کی علاقائی اور عالمی بالادستی کے منصوبے پاکستان اور بھارت کے درمیان اچھے تعلقات کے راستے میں رکاوٹ ہیں۔دفاعی پیداوار کے سیکرٹری لفٹیننٹ جنرل (ر) سید محمد اویس نے سٹرٹیجک ویژن انسٹی ٹیوٹ کی تین سالہ کارکردگی پر روشنی ڈالی۔ سیمینار کی صدارت قومی سلامتی کے لئے وزیراعظم کے مشیر لیفٹننٹ جنرل (ر) ناصر جنجوعہ نے کی۔