لاہورکی ترقی پر کچھ لوگوں کومروڑ کیوں اُٹھ رہاہے؟

29 جنوری 2016

مکرمی! لاہورکی ترقی کا مطلب ہے پنجاب کی ترقی ‘لاہورکی ترقی پر وہ تنقید کرتے ہیں جن کی اپنی رہائش گاہیں لاہورکے پوش علاقوں میں ہیں اور وہ غریب عوام کیلئے حکومتی سہولتوں پرتنقیدکرتے نہیں تھکتے۔ صوبائی وزیرقانون رانا ثناء اللہ کہتے ہیں کہ لاہور میٹروبس پر صرف تیس ارب روپے خرچ ہوئے اور اس میٹروبس میں روزانہ ڈیڑھ لاکھ افراد سفرکرتے ہیں اس طرح ماہانہ 45 لاکھ افراد سفرکرتے ہیں۔ یہ 45 لاکھ افراد عام شہری ہیں اگر ان کیلئے حکومت نے سستی سفری سہولتیں مہیاکردی ہیں اس پرتنقیدکرنے والوں کو خوش ہونا چاہئے کہ چلوحکومت عام آدمی کیلئے کچھ نہ کچھ کررہی ہے ۔ اب اورنج ٹرین کا منصوبہ جاری ہے گو وقتی طورپر عوام کو مشکلات کاسامناہے آخر میٹرو بس کے سلسلہ میں بھی عوا م نے تکالیف برداشت کی تھی اور آج عوام سکون سے سفرکرتے ہیں۔ لاہور کی ترقی پر تنقیدکرنے والوں کو کیوں مروڑ اُٹھتاہے اگر ان کو لاہور کی ترقی پسندنہیں تو وہ اپنی رہائش گاہیں لاہورسے لے جائیں جہاں ان کو عوام کی ترقی کی ضرورت نہیں۔لاہورتو اپنی ترقی کی منازلیں اسی طرح طے کرتا رہے گا۔ (محمداشرف واہلہ‘ قصور)