گستاخانہ خاکوں کیخلاف شیخوپورہ اور شیرگڑھ میں احتجاجی ریلیاں

Aug 29, 2018

شیخوپورہ/ شیر گڑھ (نمائندہ نوائے وقت+ نامہ نگار) گستاخانہ خاکوں کے خلاف پریس کلب شیخوپورہ کے زیراہتمام احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں چیئرمین غلام احمد چوہدری، صدر شہباز احمد خان، سینئر وائس چیئرمین حاجی ملک محمد بوٹا، جنرل سیکرٹری شوکت علی ناز، اراکین صاحبزادہ ریاض اکبر معصومی، شیخ عظیم علی، شیخ امتیاز احمد، سید علی معظم رضوی، چوہدری محمد خان، ملک منیر حسین کھوکھر، ملک سعود بلوچ، مصطفی خان، مجاہد شامی، ملک فاروق، رانا محمد اکرم ،میاں محمد شہباز، ایم طارق جنید، حافظ عبدالرزاق، رانا شاہد لطیف، علی عمران سمیت صحافی برادری سول سوسائٹی کے نمائندہ افراد نے شرکت کی۔ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے صدر شہباز احمد خان، جنرل سیکرٹری شوکت ناز، صاحبزادہ ریاض اکبر معصومی اور دیگر نے کہا کہ حرمت رسولؐ پر جان بھی قربان ہے، تحفظ ناموس رسالت ؑ ہمارے ایمان کا حصہ ہے جس پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا، اہل اسلام کے جذبات مجروح ہوئے ہیں او آئی سی کو چاہئے کہ اس کا فوری نوٹس لے، ذمہ داران کے خلاف سخت تادیبی کاروائی عمل میں لائی جائے۔ انہوں نے وزیراعظم پاکستان عمران خان اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو گستاخانہ خاکوں کے خلاف عالمی سطح پر احتجاج ریکارڈ کروانے پر زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کرتے کہا کہ امت مسلمہ کا ہر فرد ناموس رسالت کا چوکیدار ہے اس قسم کی ناپاک جسارت سے عالمی امن کو خطرہ لاحق ہو سکتا ہے۔ شیرگڑھ میں آل پاکستان لیگ تنظیم کے زیراہتمام گستاخانہ خاکوں کیخلاف احتجاجی ریلی حسینی موڑ سے شروع ہوئی جو مین بازار سے ہوتی ہوئی شیر گڑھ پریس کلب رجسٹرڈ کے سامنے پہنچی شرکاء ریلی سے خطاب میں پیر سید نعیم شاہ مرکزی صدرAPL، آغا فقیر علی کاظمی ،میاں محمد امجد صدر جماعت اہل سنت، رانا علی شیر، مبشر علی، محمد سجاد، علی افضال، محمد عدنان، محمد عمران، محمد نوید، محمد عاطف، غلام رسول، محمد اکرام، محمد علی، علی رضا، مزمل بھٹی، ملک علی حسن، ڈاکٹر محمد سعید، ناظم حسین، محمد شاہد، علی ساجد، حسنین کونین ،ڈاکٹر اقبال حسین، احمد حسن،قربان علی بھٹی،محمد ندیم دیمن و دیگر نے کہا کہ نبی اکرمﷺ کی ناموس پر ہم سب کی جانیں بھی قربان جائیں تو دریغ نہیں کریں گے۔ ہالینڈ نے حکومتی سرپرستی میں نبی پاکﷺ کے خاکے بناکر انکا مقابلہ کروانے کی ناپاک جسارت کی اس سے اربوں مسلمانوں کی دل آزاری ہوئی اس فعل کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ انھوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ ہالینڈ کے سفارتکار کو ملک بدر کیا جائے، سفارتی تعلقات منقطع کئے جائیں، ہالینڈ مصنوعات کا سرکاری سطح پر بائیکاٹ کیا جائے، جماعت اہل سنت، پی ایس ٹی سمیت تمام تنظیموں سے وابستہ و دیگر مسلمان اپنے طور پر جہاد کے ذریعے سے ہالینڈ سے بدلہ لینے پر مجبور ہونگے۔ اس موقع قاری محمد شریف فریدی نے ہالینڈ کی بربادی اور پاکستان کی سلامتی کی دعا کروائی۔

خاکے

مزیدخبریں