بلوچستان اسمبلی میں دھرنوں اور ’’گو سسٹم گو‘‘ کے نعرے کی شدید مذمت

28 ستمبر 2014

کوئٹہ (بیورو رپورٹ) بلوچستان اسمبلی کا اجلاس ہفتہ کو مقررہ وقت سے 40منٹ کی تاخیر سے ڈپٹی سپیکر میر عبدالقدوس بزنجو کی زیرصدارت منعقد ہوا جس میں صوبائی وزیر ایس اینڈ جی اے ڈی نواب محمد خان شاہوانی نے وزیراعلیٰ اور صوبائی وزراء کے مشاہرات، مواجبات اور استحقاقات کا ترمیمی مسودہ قانون نمبر29مصدرہ 2014ء پیش کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ اور صوبائی وزراء کے مشاہرات، مواجبات اور استحقاق کے ترمیمی مسودہ قانون نمبر29مصدرہ 2014ء کو بلوچستان اسمبلی کے قواعد وانضباط کار مجریہ 1974ء کے قاعدہ 84کے تقاضوں سے مستثنیٰ قرار دیا جائے۔ دوسرا ترمیمی مسودہ بھی صوبائی وزیر ایس اینڈ جی اے ڈی نواب محمد خان شاہوانی کی طرف سے پیش کیا گیاجوکہ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر بلوچستان صوبائی اسمبلی کے مشاہرات مواجبات استحقاقات کا ترمیمی مسودہ قانون نمبر30مصدرہ 2014ء تھا جس میں کہا گیا کہ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر بلوچستان صوبائی اسمبلی کے مشاہرات ، مواجبات اور استحقاق کے ترمیمی مسودہ قانون نمبر30مصدرہ 2014ء کو بلوچستان اسمبلی کے قواعد وانضباط کار مجریہ 1974کے قاعدہ 84کے تقاضوں سے مستثنیٰ قرار دیا جائے۔ صوبائی وزیر ایس اینڈ جی اے ڈی نے ارکان صوبائی اسمبلی کے مشاہرات مواجبات واستحقاقات کا ترمیمی مسودہ بھی پیش کیا جوکہ مسودہ قانون نمبر31مصدرہ 2014ء ہے۔ ارکان صوبائی اسمبلی نصر اللہ زیرے اور آغا لیاقت کی جانب سے مشترکہ قرارداد بھی پیش کی گئی جس کے تحت صوبائی حکومت سے سفارش کی گئی ہے کہ وہ وفاقی حکومت سے رجوع کرکے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام پاکستان کے دفاتر ضلعوں کے بجائے تحصیل سطح پر قائم کریں اور ساتھ ہی وسیلہ حق وسیلہ روزگار وسیلہ تعلیم اور وسیلہ  صحت پروگرام فوری طور پربلوچستان شروع کیا جائے اور ان اداروں میں گذشتہ تین سالوں سے اپنی خدمات سرانجام دینے والے ملازمین کو بھی مستقل کیا جائے۔ایوان نے یہ قرارداد متفقہ منظور کرلی اجلاس میں صوبائی وزیر اطلاعات، قانون و پارلیمانی امور عبدالرحیم زیارت وال نے اسلام آباد میں جاری تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک کے دھرنوں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ روز عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ اب ’’گو نواز گو‘‘ کی بجائے ’’گو سٹم گو‘‘ کا نعرہ لگایا جائے جو فیڈریشن ، قومی و صوبائی اسمبلیوں اور وفاقی و صوبائی حکومتوں کے خلاف ہے جس کی ہم شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔