کراچی میں قتل و غارت جاری، 6 افراد جاں بحق، گھر پر بم حملہ 2 زخمی

28 ستمبر 2014
 کراچی میں قتل و غارت جاری، 6 افراد جاں بحق، گھر پر بم حملہ 2 زخمی

کراچی (نوائے وقت رپورٹ+ ایجنسیاں) کراچی میں ہفتہ کے روز فائرنگ اور تشدد کے دیگر واقعات میں 6 افراد جاں بحق 4 زخمی ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق اورنگی ٹائون کے علاقے میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے 60 سالہ یونس ہلاک ہو گیا۔ فیڈرل بی ایریا سے ٹیکسی ڈرائیور سید اختر کی تشدد زدہ نعش صندوق میں بند برآمد ہوئی جو کیٹرنگ کا کام کرتا تھا۔ شبہ ہے اسے تاوان نہ ملنے پر اغوا کاروں نے قتل کیا۔ ادھر کیماڑی سے سمندر میں ڈوبی خاتون اور مرد کی نعشیں برآمد ہوئیں۔ گلشن اقبال فیڈرل بی ایریا میں گولیاں چلنے سے 3 افراد زخمی ہو گئے۔ علاوہ ازیں پولیس نے ایس ایس پی فاروق اعوان پر بم حملے کی تحقیقات آگے بڑھاتے ہوئے منگھو پیر میں کالعدم تنظیم کے کارندے شاکراللہ کے ٹھکانے اور دیگر جگہوں پر چھاپے مار کر 6 افراد کو حراست میں لے لیا تاہم ملزم شاکراللہ پولیس کے ہتھے نہ چڑھ سکا۔ ادھر رات گئے مواچھ گوٹھ اور لیاری میں فائرنگ سے 2 افراد جاں بحق 2 زخمی ہو گئے جن کی شناخت معلوم نہ ہو سکی۔ گلشن معمار کے ایک گھر پر دستی بم حملے میں گھر کے قریب کھڑے 2 افراد شدید زخمی ہوگئے۔ دوسری طرف رینجرسندھ نے ٹارگٹ کلرز کے بارے میں معلومات دینے پر پانچ لاکھ روپے انعام کا اعلان کردیا ہے، معلومات فراہم کرنیوالے شہری کا نام اور شناخت ظاہر نہیں کی جائیگی۔ رینجرنے ٹارگٹڈ آپریشن کے سلسلے میں مزید اقدامات کی جانب پیشرفت شروع کردی ہے، رینجرسندھ نے ٹارگٹ کلرزکی گرفتاری کیلئے عام شہریوں سے مدد لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ پاکستان رینجرسندھ کے ترجمان کے مطابق کسی بھی ٹارگٹ کلرکی گرفتاری میں مدد کے لئے رینجرکی ہیلپ لائن ڈبل ون، زیروون پرمعلومات فراہم کی جاسکتی ہے۔ رینجرز حکام کاکہنا ہے کہ معلومات فراہم کرنیوالے شہری ٹارگٹ کلرکا نام اور اسکی موجودگی کے مقام سے رینجرسندھ کو آگاہ کریں۔ رینجر سندھ کے مطابق ٹارگٹ کلرکے بارے میں معلومات فراہم کرنیوالے کا نام صیغہ رازمیں رکھا جائیگا۔