مینار پاکستان شو اسلام آباد دھرنے کے مستقبل کا تعین کر دیگا، تحریک انصاف کی بھرپور تیاری

28 ستمبر 2014

لاہور (جواد آر اعوان/ دی نیشن رپورٹ) تحریک انصاف جو اسلام آباد میں جاری دھرنے کے باعث بظاہر سیاسی نقصان کی طرف جا رہی ہے آج مینار پاکستان میں بھرپور عوامی مظاہرہ کر کے آزادی مارچ کی تحریک کو دوبارہ عروج دینے کی کوشش کریگی تاکہ اس دھرنے سے اپنا مطلوبہ ہدف حاصل کیا جا سکے۔ تحریک انصاف کے رہنما مینار پاکستان کے عوامی اجتماع کو بڑی اہمیت دے رہے ہیں اور مسلم لیگ کے گڑھ میں ایک کامیاب شو کو اپنی علامتی فتح قرار دے رہے ہیں۔ مینار پاکستان پر ہونے والا آج کا جلسہ تحریک انصاف کی تحریک کے مستقبل کا تعین بھی کریگا۔ یہی وجہ ہے کہ پارٹی مینار پاکستان کے جلسے کیلئے بڑے پیمانے پر تیاری کر رہی ہے۔ تحریک انصاف پنجاب کے صدر چودھری اعجاز نے ’’دی نیشن‘‘ کو بتایا کہ پارٹی کے قومی اسمبلی کے تمام سابقہ ٹکٹ ہولڈرز اور موجودہ ارکان میں سے ہر ایک کو 500 کارکن لانے اور صوبائی اسمبلی کے ارکان میں سے ہر ایک کو 300 کارکن لانے کا ٹاسک دے دیا گیا ہے۔ وسطی اور شمالی پنجاب پر خصوصی توجہ دی گئی ہے اور لاہور، گوجرانوالہ، سیالکوٹ، قصور، نارووال، ساہیوال، ننکانہ صاحب، سرگودھا، خوشاب، منڈی بہاء الدین، میانوالی، بھکر اور جھنگ سے بڑے پیمانے پر کارکنوں کو مینار پاکستان لایا جائیگا۔ پارٹی کے عہدیداروں کو بھی متحرک کر دیا گیا۔ ایک اور پارٹی رہنما نے بتایا کہ مینار پاکستان میں 50 ہزار کرسیاں رکھ دی گئی ہیں تاہم آزادانہ ذرائع کے مطابق جلسہ گاہ میں 30 ہزار کرسیاں لگائی گئی ہیں۔ پارٹی کی ہائی کمان نے اپنے تمام عہدیداروں کو جلسہ میں 3 لاکھ یا کم از کم ڈیڑھ لاکھ لوگوں کو جلسے میں لانے کا ٹاسک دیا ہے۔ آج کے جلسے میں ڈیڑھ لاکھ افراد آ گئے تو یہ جلسہ تحریک انصاف کے 30 اکتوبر 2011ء کے جلسے سے بھی بڑا ہو جائیگا۔ تحریک انصاف کی یہیں سے شروع ہونے والی تحریک میں نئی جان پڑ جائیگی۔