نواز شریف نے کشمیریوں کی صحیح ترجمانی کی، حریت رہنما‘پاکستان بھارت درخواست کریں تو کردار ادا کرنے کو تیار ہیں: بانکی مون

28 ستمبر 2014

سرینگر (آن لائن+ آئی این پی) کشمیری قیادت نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں وزیراعظم نوازشریف کے خطاب کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ نوازشریف نے مسئلہ کشمیر پر ایک فریق کی حیثیت سے اپنا ٹھوس موقف پیش کرکے کشمیری عوام کی صحیح ترجمانی کی ہے۔ وزیراعظم نوازشریف کے کشمیر پر دوٹوک موقف سے کشمیریوں کے حوصلے بلند ہوئے ہیں اور انکی تحریک میں نئی روح پھونک دی ہے۔ کل جماعتی حریت کانفرنس (گیلانی گروپ) کے سربراہ سید علی گیلانی نے نوازشریف کے جنرل اسمبلی سے خطاب کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے جنرل اسمبلی میں کشمیر کے مسئلے کو اسکے تاریخی پس منظر میں پیش کیا ہے جس سے کشمیری عوام کے حوصلے بلند ہوئے ہیں۔ وزیراعظم نوازشریف نے کشمیر پر ٹھوس موقف اختیار کرکے کشمیری عوام کی ترجمانی کرکے انکے زخموں پر مرہم رکھا ہے۔ خطے میں پائیدار امن کا قیام مسئلہ کشمیر سے مشروط ہے۔ مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر امن کا حل ناممکن ہے۔ بھارت کو اپنی ہٹ دھرمی ترک کرکے اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کا حل تلاش کرنا چاہئے۔ کل جماعتی حریت کانفرنس (میر واعظ گروپ) کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے نوازشریف کے جنرل اسمبلی میں خطاب کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے دو ٹوک موقف اپنانے سے بھارت پر مسئلہ کشمیر کے حل پر دبائو بڑھ جائیگا۔ انہوں نے بھارتی حکومت پر زور دیا کہ وہ کشمیری عوام کو حق خودارادیت دینے کا وعدہ پورا کرے۔ جموں و کشمیر ماس موومنٹ کی سربراہ فریدہ بہن جی نے بھی وزیراعظم نوازشریف کے خطاب کو سراہا اور کہا ہے کہ پاکستان نے کشمیر پر اپنا جاندار موقف اختیار کرکے کشمیری عوام کے دل جیت لئے۔ انہیں نیا حوصلہ دیا ہے۔ جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یٰسین ملک نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کا ایک ہی حل ہے کہ اسے بھارت سے الگ کردیا جائے۔ مسئلہ کشمیر کو ہر فورم پر اٹھایا جائے۔ دیگر کشمیری رہنمائوں شبیر احمد شاہ‘ ظفر اکبر بٹ‘ پروفیسر عبدالغنی اور دیگر نے بھی وزیراعظم نوازشریف کے خطاب کو سراہتے ہوئے اسے کشمیری عوام کیلئے امید کی کرن قرار دیا۔ وزیراعظم آزاد کشمیر عبدالمجید نے کہا کہ وزیر اعظم نوازشریف کا اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں خطاب کشمیریوں کے موقف کا عکاس ہے۔ کل جماعتی حریت کانفرنس آزا دکشمیر شاخ نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں وزیراعظم میاں نوازشریف کے خطاب کو کشمیری عوام کی امنگوں اور جذبہ کا ترجمان قرار دیا ہے۔ اقوام متحدہ کے سیکرٹر ی جنرل بان کی مون نے کہا ہے کہ اگر پاکستان اور بھارت درخواست کریں تو عالمی ادارہ تنازعہ کشمیر کے حل کیلئے کردار ادا کر سکتا ہے۔ بان کی مون نے نیویارک میں وزیراعظم پاکستان محمد نواز شریف کے ساتھ ملاقات کے بعد ایک انٹرویو  میں کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے اقوام متحدہ اپنا اثر و رسوخ استعمال کرنے کے لیے تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ پہلے ہی یہ بات کہہ چکے ہیں کہ تنازعہ کشمیر کو بات چیت کے ذریعے ہی حل کیا جا سکتا ہے۔ انہوں  نے مقبوضہ کشمیر میں سیلاب کے باعث بڑے پیمانے پر ہونے والی تباہی پر افسوس کا اظہار کیا۔امیر حزب المجاہدین و چیئرمین متحدہ جہاد کونسل سید صلاح الدین نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں وزیراعظم کا خطاب کشمیریوں کے جذبات کا عکاس ہے۔ ایک اعلیٰ سطحی اجلاس کے دوران انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پاکستان کے دیرینہ مؤقف کا اعادہ انتہائی خوش آئندہ ہے۔ وزیراعظم نے کشمیریوں کے دل جیت لئے۔  
کشمیری رہنما  / ردعمل