کوالالمپور میں پی آئی اے کے جہاز کا دروازہ خراب، مسافر 2 گھنٹے پھنسے رہے

28 نومبر 2013

کوالالمپور (نوائے وقت رپورٹ) پی آئی اے کی کوالالمپور پہنچنے والی پرواز پی کے 899 کا پچھلا دروازہ خراب ہو گیا۔ ذرائع کے مطابق مسافر دو گھنٹے طیارے میں پھنسے رہے۔ کوالالمپور ایئرپورٹ انتظامیہ نے دروازہ ٹھیک نہ ہونے پر طیارے کو 3 گھنٹے روکے رکھا۔ پرواز کی لاہور آمد میں تاخیر ہوئی، اس پرواز کو رات 2 بجکر 20 منٹ پر لاہور پہنچنا تھا۔

چیف جسٹس سمیت7ججز کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کی درخواست صدر کو ارسال
اسلام آباد(وقائع نگار خصوصی) وفاقی وزارت قانون و انصاف کی سابق سیکرٹری یاسمین عباسی نے چیف جسٹس افتخار محمد چودھری سمیت 7 ججوں کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کی درخواست صدر مملکت ممنون حسےن کو ارسال کی ہے۔انہوں نے درخواست میں جسٹس افتخار محمد چودھری کے علاوہ جسٹس (ر) بھگوان داس، جسٹس جاوید اقبال، جسٹس شاکر اللہ جان جسٹس ناصرالملک، جسٹس راجہ فیاض احمد اور جسٹس غلام ربانی کو فریق بنایا ہے۔ درخواست مےں کہا گےا ہے کہ سات ججوں نے 3 نومبر 2007ءکو حکم امتناعی جاری کر کے مجھ سمیت باقی تمام ججوں کو پی سی او کے تحت حلف لینے سے روک دیا تھا اورپھر اسی فیصلے کی بنیاد پر 31جولائی 2009ءکو یہ فیصلہ دیا کہ جنہوں نے اس حکم امتناعی کے باوجود حلف اٹھایا انہوں نے عدالت کے فیصلے سے روگردانی کی ہے ان کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔ صدر کو لکھے گئے خط میں یاسمین عباسی نے دعویٰ کیا کہ اس وقت فیصلہ تحریر نہیں کیا گیا تھا بلکہ یہ بعد میں لکھی گئی تحریر ہے جو جعلسازی کے زمرے میں آتی ہے۔ یاسمین عباسی نے خط میں لکھا ہے کہ اس دن سپریم کورٹ کی عمارت کو فوجی اہلکاروں نے گھیرے میں لے رکھا تھا اور یہ تصور کرنا بھی ممکن نہیں کہ کوئی جج اس کے اندر داخل ہوسکا ہو پھر یہ حکم کیسے جاری کیا گیا۔ یاسمین عباسی نے مزید کہا کہ میں نے اس حکم کے بارے میں اس وقت سندھ ہائیکورٹ کے رجسٹرار سے ایسے کسی حکم کے بارے میں پوچھا تو جواب میں رجسٹرار نے مجھے بتایا کہ انہیں اس قسم کا کوئی حکم موصول نہیں ہوا جس کو بنیاد بنا کر پی سی او ججز کو فارغ کیا گیا ہے۔ سابق سیکرٹری قانون نے مزید لکھا ہے کہ فارغ کئے گئے پی سی او ججز کو موقف پیش کرنے کا بھی موقع نہیں دیا گیا۔
یاسمین عباسی