خانقاہ ڈوگراں: دیرینہ دشمنی، مخالفین کی فائرنگ سے راہگیر کانسٹیبل سمیت 2 قتل

28 نومبر 2013

خانقاہ ڈوگراں (نامہ نگار) گا¶ں چنیانوالی میں دیرینہ دشمنی پر راہگیر پولیس کانسٹیبل سمیت 2 افراد مارے گئے۔ تفصیلات کے مطابق چنیانوالی کے رہائشی ارشاد گروپ اور رفیق گروپ کے درمیان عرصہ چھے سال سے معمولی تنازعہ پر دشمنی چلی آرہی تھی جس کی وجہ سے دونوں گروپ اشتہاری ہوچکے تھے اور دونوں گروپ گاﺅں چھوڑ گئے تھے آج کے صبح عابد علی اور اسکی والدہ موٹر سائیکل پر سوار ہو کر شیخوپورہ تاریخ پر جا رہے تھے محمد علی گروپ کے چھ افراد راستے میں گھات لگائے بیٹھے ہوئے تھے۔ گاﺅں شیروکی کا ہیڈ کانسٹیبل ذوالفقار عرف لالہ اپنی موٹر سائیکل پر اپنی ڈیوٹی پر تھانہ صدر فاروق آباد جا رہا تھا۔ اسی دوران مخالف پارٹی نے اسے قریب آتے دیکھا تواندھا دھند فائرنگ شروع کر دی۔ ذوالفقار عرف لالہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر دم توڑ گیا۔ جب مخالف گروپ نے مقتول کا ہیلمٹ اتارا تو دیکھتے ہی انہوں نے کہا یہ تو کوئی اور مارا گیا ہے، اچانک اتنے میں موٹر سائیکل پر سوار عابد علی اور اسکی والدہ جو چنیانوالی کے رہائشی ہیں، کو دیکھتے ہی عابد علی پر فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں عابد علی موقع پر جاںبحق ہو گیا۔ ملزمان فائرنگ کرتے ہوئے موقع سے فرار ہو گئے۔ اسکی والدہ نے چیخ و پکار شروع کر دی، علاقہ کے لوگ جمع ہو گئے، اطلاع پر ڈی ایس پی سید اصغر تنویر اور ایس ایچ او مہر ربنواب نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے اور نعشوں کو قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کیلئے شیخوپورہ ریفر کر دیا، پولیس نے چھ افراد پر مقدمہ درج کر لیا۔
2 قتل