گھلنے والی درد کش ادویات میں شامل نمک صحت کیلئے خطرہ بن سکتا ہے: تحقیق

28 نومبر 2013
گھلنے والی درد کش ادویات میں شامل نمک صحت کیلئے خطرہ بن سکتا ہے: تحقیق

لندن (بی بی سی اردو) برطانیہ میں محققین نے خبردار کیا ہے کہ پانی میں گھلنے والی درد کش ادویات نمک کی آمیزش کے باعث صحت کیلئے خطرہ ہوسکتی ہے۔ تحقیق کے مصنفین کا کہنا ہے بعض دواﺅں میں بالغوں کیلئے یومیہ تجویز کردہ حد سے کہیں زیادہ سوڈیم پایا جاتا ہے جس کے بعض اوقات خطرناک نتائج سامنے آتے ہیں۔ یہ نتائج برطانیہ کے 12 لاکھ مریضوں کے طبی معائنے سے اخذ کئے گئے ہیں۔ برطانیہ میں لاکھوں لوگ یہ دوائیں استعمال کرتے ہیں۔ مطالعے سے پتہ چلا کہ پانی میں فوری حل ہونیوالی درد کش ادویات اور دل کے دوروں اور فالج میں تعلق پایا جاتا ہے۔ وہ تمام ادویات جن میں کم سے کم 23 ملی گرام سوڈیم ہوتا ہے جو اصل میں خوردنی نمک کا جز ہے ان تمام پہ یہ تحریر ہونا چاہئے کہ ان میں سوڈیم موجود ہے۔