بیرون ملک کالیں کرانے والی کمپنیوں کے دفاتر پر چھاپوں کے خلاف درخواست پر پی ٹی اے سے دوبارہ جواب طلب

28 نومبر 2013

لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے بیرون ملک کالیں کرانے والی کمپنیوں کے دفاتر پر ایف آئی اے کے چھاپوں کے خلاف دائر درخواست پر پی ٹی اے کو دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔ سماعت 9 دسمبر تک ملتوی کر دی گئی۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد بلال حسن نے کیس کی سماعت کی۔ درخواست گذار کے وکیل میاں عرفان اکرم نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پی سی او کے ذریعے بیرون ملک کالز کرانے والی کمپنیوں کے دفاتر پر بغیر کسی قانونی جواز کے چھاے مارے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آئین کے تحت جائز کاروبار کرنا ہر شہری کا بنیادی حق ہے مگر ان چھاپوں کے ذریعے ان کے کاروبار کو شدید نقصان پہنچایا جا رہا ہے۔ ایف آئی اے کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ پی ٹی اے کی ہدائت کی روشنی میں بیرون ملک کالز کرانے والی کمپنیوں کے دفاتر پر چھاپے مارے گئے اور ان کے ریکارڈ کو چیک کیا گیا۔