بھارت کو تجارت کیلئے پسندیدہ ترین ملک قرار دینے کا ارادہ نہیں: خرم دستگیر

28 نومبر 2013

اسلام آباد (آئی این پی) وزیرمملکت برائے تجارت خرم دستگیر نے  بھارت کو تجارت کے لحاظ سے پسندیدہ ترین ملک  قرار دینے  کے  امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ  بھارت میں  پاکستان سے متعلق امتیازی تجارتی قوانین موجود ہیں۔ بھارتی حکومت مثبت اقدامات نہیں کر  رہی، ابھی بھارت کو تجارت کیلئے پسندیدہ ترین ملک قرار دینے کا ارادہ نہیں ہے۔بھارت کی 82 فیصد اشیاء پہلے ہی پاکستان کی تجارتی لسٹ میں شامل ہیں۔ بھارت سے تجارت کی بڑھوتری  کیلئے  موجودہ حکومت سے بات کرنے کا کوئی فائدہ نہیں کیونکہ بھارتی حکومت پاکستان کے ساتھ تجارت کے معاملے  پر کسی بھی قسم کے اقدامات نہیں کر رہی۔   پاکستان کو یکم جنوری 2014ء سے جی ایس پی پلس سٹیٹس مل جائیگا جس کے تحت یورپی یونین کے ممالک میں 600 سے زائد پاکستانی ٹیکسٹائل مصنوعات پر ڈیوٹی صفر ہوجائے گی‘ آئندہ تجارتی پالیسی میں خام مال کی بجائے ویلیو ایڈڈ اشیاء کی برآمدات کے فروغ کو ترجیح دیں گے۔ ہمسایہ ممالک چین اور بنگلہ دیش پاکستانی کپاس‘ سوتی دھاگہ اور خام چمڑا خرید کر ہماری لیدر گارمنٹ انڈسٹری کو عالمی مارکیٹ میں مات دے رہے ہیں۔