تمام غیر قانونی ہائیڈرنٹس کو مسمار کریں گے ‘ شرجیل میمن

28 نومبر 2013

کراچی (وقائع نگار ) سندھ کے وزیر بلدیات و اطلاعات شرجیل انعام میمن نے کہا ہے کہ انہوں نے محکمہ بلدیات کا چارج سنبھالنے کے بعد سے اب تک 22 غیر قانونی ہائیڈرینٹ کو مسمار کرایا ہے اور بقیہ 40 کو بھی آئندہ ایک ہفتہ میں مسمار کردیا جائے گا شہر میں تمام غیر قانونی ہائیڈرینٹس، سائن بورڈز، پارکنگ، پارکس اور شادی ہالز کا خاتمہ کردیا جائےگا غیر قانونی کاموں میں اگر کوئی محکمے کا افسر یا اہلکار ملوث ہوا تو اس کے خلاف بھی سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روڈ سلطان آباد میں قائم میراج ہائیڈرنٹس نامی غیر قانونی ہائیڈرینٹ پر چھاپے اور اس کو فوری طور پر مسمار کئے جانے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ایم ڈی واٹر بورڈ قطب الدین شیخ اور دیگر اعلیٰ حکام بھی ان کے ہمراہ موجود تھے۔ صوبائی وزیر نے مذکورہ غیر قانونی ہائیڈرینٹس پر اچانک چھاپے مار کر مذکورہ ہائیڈرینٹس پر کھڑے ٹینکرز اور دیگر سامان کو بھی قبضے میں لینے کے احکامات دئیے اور اپنی نگرانی میں پورے ہائیڈرینٹس کو مسمار کروایا۔ صوبائی وزیر بلدیات نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت کراچی کے شہریوں کو پانی کے بحران سے نجات دلائے۔ غیر قانونی ہائیڈرینٹس کے خاتمے سے کراچی کے شہریوں کو روزانہ کی بنیاد پر بلا ناغہ پریشر کے ساتھ پانی فراہم کیا جاسکے گا اور ابھی تک جن جن علاقوں میں غیر قانونی ہائیڈرینٹس کا خاتمہ کیا گیا ہے وہاں پانی کا بحران ختم ہوگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ غیر قانونی ہائیڈرینٹس سمیت دیگر معاملات میں عدالتوں کی جانب سے اسٹے کے باعث محکموں اور سندھ حکومت کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔