کشمیر کی آزادی تک بھارت کی آزادی و سلامتی بھی نامکمل: گوتم نولکھا

28 نومبر 2013

سری نگر (کے پی آئی) بھارتی حکومت  اور  حریت کانفرنس کے مجوزہ مذاکرات کوبے معنی‘ قرار دیتے ہوئے سرکردہ انسانی حقوق علمبردار گوتم نولکھا نے واضح کیا کہ کشمیرکی آزادی تک بھارت کی آزادی وسلامتی بھی نامکمل رہے گی ۔انہوں نے کہا کہ بھارت کیساتھ مذاکرات کرکے کشمیری مزاحمتی لیڈرشپ کوکچھ حاصل نہیں ہوگا۔ گوتم نولکھا نے کہا کہ جو حکومت1952کے دہلی ایگریمنٹ کو خاطر نہیں لاتی ہے، وہ آئین ہند کے دائرے میں حریت  پسندوں کو کیا پیش کرسکتی ہے۔ الیکشن بائیکاٹ کال دینے کو مزاحمتی خیمے کا جمہوری حق قرار دیا۔