فاسٹ باؤلنگ ایک غور طلب مسئلہ؟

28 نومبر 2013

مکرمی! کرکٹ میں فاسٹ باؤلر وہی مقام رکھتے ہیں جو جنگ میں بمبار طیارہ مخالف ٹیم کے بلے بازوں کو اپنی تندوتیز باؤلنگ اور اس میں سلوڈیلیو ریز اور باؤنسر میں رفتار کی تبدیلی فاسٹ باؤلر کو ایک منفرد مقام دیتی ہے۔ پاکستان نے بھی بہت سے نامور فاسٹ باؤلر پیدا کئے جنہوں نے دنیائے کرکٹ میں اپنا نام بنایا۔ وسیم، وقار کے جانے کے بعد فاسٹ باؤلر کی قلت کیوں پڑ گئی اور اب فاسٹ باؤلر لاہور کراچی، راولپنڈی اور بڑے شہروں سے ہٹ کر دیہاتوں اور چھوٹے مقامات سے آ رہی ہیں۔ اس کی بنیادی وجہ ان علاقوں میں کھلاڑیوں کا جسمانی طور پر مضبوط ہونا اور باقاعدگی سے کلب پریکٹس کرنا ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ میں بیٹھے تنومند سفید ہاتھی جو لاکھوں روپے ماہوار تنخواہیں لینے والے ٹھنڈے کمروں میں بیٹھ کر سیاسی طور پر مضبوط کرکٹ کو تباہ کر رہے ہیں ان سمیت کسی سلیکٹر نے گراؤنڈ میں جا کر کوئی میچ دیکھنے کی تکلیف اٹھائی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے حکام بالا میری بات توجہ سے سنیں جو ٹیم کھیل رہی ہے وہ سلیکٹر ز اور تمہاری نہیں وہ خالصتاً مصباح اور حفیظ کی ہے وہی اپنے ریجن اور محکمہ کے کھلاڑیوں کو ترجیح دے کر قومی ٹیم بناتے ہیں اگر پورے ملک میں ٹیلنٹ دیکھا جائے تو بہت سے فاسٹ باؤلر قومی ٹیم کی رکنیت بن سکتے ہیں۔(ظاہر شاہ سابق فرسٹ کلاس کرکٹر)