فنانشل ایکشن ٹاسک فورس ( ایف اے ٹی ایف ) نے پاکستان کو گرے لسٹ میں شامل کردیا

Jun 28, 2018 | 19:00

ویب ڈیسک

پاکستان کی نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر کی کوششوں کے باوجوددہشت گردی کے لیے مالی وسائل کی ترسیل پر نظر رکھنے والی عالمی تنظیم فنانشل ایکشن ٹاسک فورس ( ایف اے ٹی ایف ) نے پاکستان کو گرے لسٹ میں شامل کردیا ہے.فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے اجلاس میں امریکہ، برطانیہ، جرمنی اور فرانس نے پاکستان کو گرے لسٹ میں شامل کرنے کے حق میں ووٹ دیا جبکہ پاکستان کے حلیف ممالک تصور کیے جانے ممالک ترکی، چین اور سعودی عرب نے بھی امریکی اور برطانوی دباؤ پر اس کی حمایت کی . امریکی میڈیا کے مطابق پاکستان کو گرے لسٹ میں ڈالنے کا فیصلہ فروری میں کیا جا چکا تھا لیکن پاکستان کو دہشت گردی کے لیے مالی وسائل کی روک تھام کے لیے اقدامات کرنے کا بھی کہا گیا تھا جن پر عمل درآمد کی صورت میں پاکستان اس لسٹ میں آنے سے بچ سکتا تھا لیکن پاکستان رکن ممالک کو ان اقدامات سے مطمئن نہیں کر سکا. پاکستان کی ٹیم میں ماہرین اور تجربہ کار افراد شامل نہیں تھے جس کے باعث نگران حکومت کی بھیجی جانے والے ٹیم ٹاسک فورس کے ارکان کو قائل کرنے میں ناکام رہی. امریکی میڈیا کے مطابق فرانس نے پاکستان کو گرے لسٹ میں شامل کرنے کی بات اس لیے کی کہ فرانس کی طرف سے پاکستان میں حافظ سعید کے خلاف کارروائی کرنے کے لیے دباؤ تھا لیکن اس کے باوجود حافظ سعید کی کالعدم تنظیم کو مختلف نام سے انتخابات میں حصہ لینے کی اجازت دی گئی. ایف اے ٹی ایف کا اگلا اجلاس ستمبر میں ہوگا اور خدشہ ہے کہ پاکستان کو مؤثر اقداما ت نہ کرنے پر بلیک لسٹ بھی کیا جاسکتا ہے.

مزیدخبریں