اسلام آباد میں دو ماہ کیلئے دفعہ 144 نافذ، ریڈ زون ، جناح ایونیو میں اجتماع پر پابندی

27 اکتوبر 2016 (18:51)

اسلام آباد ضلعی انتظامیہ نے دو نومبر کو وفاقی دارالحکومت میں تحریک انصاف کے دھرنے سے پہلے2ماہ کیلئے دفعہ144نافذ کر دی، نوٹی فکیشن کے تحت ریڈ زون، تھرڈ ایونیو، مری روڈ اور جناح ایونیو پر کسی بھی قسم کے اجتماع پر پابندی عائد ہو گی،آبپارہ روڈ، سرینا چوک اور ڈھوکری چوک سے لیکر تھرڈ ایونیو پر بھی 5 یا 5 سے زائد افراد جمع نہیں ہو سکیں گے۔تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ اسلام آباد کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق انہیں اطلاعات ملی ہیں کہ کچھ مخصوص لوگ اسلام آباد میں احتجاجی مظاہرہ کرناچاہتے ہیں، مخصوص لوگوں کے اکٹھا ہونے سے اسلام آباد کے امن میں خلل واقع ہوسکتا ہے اور عوام الناس کی زندگیاں خطرے میں پڑ سکتی ہیں۔نوٹیفکیشن کے مطابق ملک کی موجودہ صورتحال کے پیش نظر اسلام آباد میں 2 ماہ کے لیے دفعہ 144 نافذ کی گئی ہے۔ جس کے تحت وفاقی دارالحکومت میں اسلحہ کی نمائش، لاؤڈسپیکر کے استعمال، جلسے، جلوس اور دھرنے پر پابندی ہوگی، 5 یا اس سے زائد افراد کسی بھی عوامی جگہ پر جمع نہیں ہوسکتے۔ اس کے علاوہ تھرڈ ایونیو، فورتھ ایونیو ، اتاترک روڈ اور شاہراہ سہروردی سمیت ریڈزون اور اس سے ملحقہ علاقوں میں غیر متعلقہ افراد کے داخلے پر پابندی ہوگی جبکہ آبپارہ روڈ، سرینا چوک اور ڈھوکری چوک سے لیکر تھرڈ ایونیو پر بھی 5 یا 5 سے زائد افراد جمع نہیں ہو سکیں گے ۔ سی ڈے اے نوٹیفیکیشن کے مطابق احتجاج کے لیے مختص پریڈ ایونیو کو پیشگی اجازت کے بعد استعمال کیا جا سکتا ہے۔