مضاربہ سیکنڈل‘ کمپنیوں سے اب تک 60 کروڑ روپے سے زائد برآمد کئے: نیب

27 اکتوبر 2016

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) سینٹ کی مجلس قائمہ خزانہ کے اجلاس میں نیب کی طرف سے بتایا گیا کہ مضاربہ سیکنڈل میں ملوث کمپنیوں سے اب تک 60 کروڑ 20 لاکھ روپے برآمد کئے گئے ہیں۔ جس میں سے متاثرین میں ایک کروڑ 45 لاکھ روپے تقسیم کر دیئے گئے۔ کمیٹی نے نیب کو ہدایت کی 15 دن کے اندر اس معاملہ میں تحریری تفصیلی جواب دیا جائے۔ اجلاس میں کمیٹی کے چیئرمین کی طرف سے پیش کردہ غیر ملکی کرنسی اکا¶نٹس کے بارے میں ”مقامی اصلاحات کے تحفظ کے قانون میں ترمیم کے بل پر غور کیا گیا۔ کمیٹی نے رائے دی کہ غیر ملکی کرنسی اکا¶نٹس پر نظر رکھنے کی ضرورت ہے۔ اجلاس میں سٹیٹ بنک کی طرف سے مجوزہ ترمیم کی مخالفت کی گئی اور کہا ترمیم میں جو کچھ تجویز کیا گیا ہے وہ پہلے ہی قواعد میں موجود ہے اور اینٹی منی لانڈرنگ کے قانون میں بھی اس کو شامل کیا گیا ہے۔ بل پر مزید غور آج تک ملتوی کر دیا گیا۔ ایف بی آر کو ہدایت کی گئی کہ وہ بھی مجوزہ بل کے بارے میں اپنی رائے دے۔ اجلاس میں کمیٹی کے چیئرمین سلیم مانڈری والا کی طرف سے کارپوریٹ بحالی کے نجی بل کو منظور کرنے کی سفارش کی گئی۔ اجلاس میں سیکرٹری خزانہ نے بتایا کہ فنانس بل 2016ءکے حوالے سے کمیٹی کی 139 سفارشات میں سے 39 پر عمل کر دیا گیا ہے۔ 12 پر جزوی طورپر عمل ہے جبکہ 22 زیر عمل ہیں۔ اجلاس خواجہ سرا¶ں کو نئی مردم شماری میں شمار کرنے کے بارے میں غور کیا گیا۔ شماریات ڈویژن کے نمائندے نے کہا کہ مجوزہ مردم شماری میں اس کا انتظام کر لیا گیا ہے اور فارم میں ایک نئی ”انٹری“ 3 کا اضافہ کیا گیا ہے کمیٹی نے اس پر اپنے اطمینان ظاہر کیا۔
مجلس قائمہ خزانہ