سی ایس ایس‘ پی سی ایس کے مشکل پیپر‘ امیدوار انٹرویو تک پہنچنے میں ناکام

27 اکتوبر 2016

لاہور (سٹاف رپورٹر) فیڈرل پبلک سروس کمیشن اور پنجاب پبلک سروس کمیشن میں مشکل ترین پیپروں کے آنے اورسخت چیکنگ کے باعث امیدواروں کی بڑی تعداد انٹرویو کے مراحل تک پہنچنے میں ناکام ہو رہی ہے ماضی قریب میں پنجاب پبلک سروس کمیشن میں ہونیوالے اے ایس آئی و دیگر امتحانات میں مشکل پیپر ہونے کی وجہ سے امیدوار وں کی جتنی سیٹیں تھیں اتنے ہی امیدوار کامیاب ہو سکے جبکہ انٹرویو کی ویلیو نہ ہونے کے برابر رہ گئی ہے پبلک سروس کمیشن میں ہونے والے پیپروں کے دوران عام طور پر ایک سیٹ کے لئے 5امیداروں کو ٹیسٹ میں کلئیر کیا جاتا ہے تا کہ انٹرویو کے ذریعے ان 5میں سے 1 بہترین امیدوار کاانتحاب کیا جا سکے لیکن مشکل پیپر بنانے سے دھرنا ممکن ہو رہا ہے جبکہ فیڈرل پبلک سروس کمیشن میں بھی اسی طرح کی صورت حال ہے متعلقہ محکموں کے حکام کا کہنا ہے کہ سی ایس ایس کے پیپروں میں یہ مضمون میں امیدواروں کو100میں سے کم از کم 40فیصد نمبرز لینے ضروری ہیں اور مجموعی طور پر 50فیصد سے زائد نمبر لینے ضروری ہیں اس کے بعد ہی امیدوار انٹرویو دینے کا اہل ہو سکتا ہے اس کے بغیر امیدوار انٹرویو کا اہل نہیں ہوتا جبکہ پنجاب پبلک سروس کمیشن میں بھی امتحان میں امیدوار کی جانب سے 40نمبرز لینے ضروری ہیں اور کوشش ہوتی ہے کہ ایک سیٹ کے لئے 5امیدواروں کا ٹیسٹ کلئیر ہو تا کہ انٹرویو کے مراحلہ کے ذریعے بہترین امیدوار کا انتحاب کیا جائے ۔