بھارت میں رہنے کیلئے مسلمان رام کا راستہ اختیار کریں : وشوا ہندو پریشد کی ہرزہ سرائی

27 اکتوبر 2016

منگلور(صباح نیوز)بھارتی ہندو انتہا پسند جماعت وشوا ہندوپریشدکے رہنما نے الزام عائد کیا ہے کہ مسلمان بھارت میں امن سکون کو متاثر کرنے کی کوشش کررہے ہیں، اگر بھارت میں رہنا چاہتے ہیں تو مسلمانوں کو رام کا راستہ اختیار کرنا پڑیگا۔جوائنٹ سیکرٹری سریندر کمار ین نے بجرنگ دل کے زیراہتمام ساوتھ انڈیا کے ہندو جیا گھوش کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ہرزہ سرائی کی کہ مسلمان ایک دوسرے کو قتل کرنے والی قوم ہے۔ اگر مسلمان ہندو مذہب اختیار کرلیں تو انہیں مکمل تحفظ فراہم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ مسلمانوں کے کئی گروپس ہیں جو ایک دوسرے سے نفرت کرتے ہیں، مسلم ممالک میں امن نہیں ہے اور وہ لوگ بھارت میں امن سکون کو متاثر کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔