بھارتی فائرنگ سے مزید 2 شہری شہید :پاک فوج کا منہ تو ڑ جواب 5 انڈین فوجی ہلاک

27 اکتوبر 2016

اسلام آباد+ سیالکوٹ ( نامہ نگار+ سٹاف رپورٹر+ نوائے وقت رپورٹ) بھارت کی جانب سے لائن آف کنٹرول اور ورکنگ بائونڈری پر مسلسل جارحیت اور جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی جاری ہے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق گزشتہ روز ورکنگ بائونڈری پر چپراڑ سیکٹر میں بھارت کی بلا اشتعال فائرنگ سے مزید دو شہری شہید جبکہ 8 زخمی ہوگئے۔ پنجاب رینجرز نے بھارتی بلا اشتعال فائرنگ کا بھر پور جواب دیا ۔ ترجمان آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ دو دن میں شہادتوں کی تعداد 7 ہو گئی۔ ادھر کنٹرول لائن پر زخمی ہونے والا شہری بھی شہید ہوگیا۔آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فورسز نے ورکنگ بائونڈری کے ہر پال اور چپراڑ سیکٹر پر بلااشتعال فائرنگ کی۔ زخمیوں کو سی ایم ایچ سیالکوٹ منتقل کر دیا گیا۔ زخمی ہونے والوں میں غلام رسول کا تعلق کرلوپ اور مبارک علی کا تعلق سنگھیال سے ہے۔ لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی خلاف ورزیوں پر احتجاج ریکارڈ کرانے کیلئے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو دوبارہ دفتر خارجہ طلب کیا گیا۔ پاکستان کی جانب سے ایل او سی اور ورکنگ بائونڈری پر بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ سے شہادتوں اور لوگوں کے زخمی ہونے کے واقعات پر شدید الفاظ میں مذمت کی گئی اور احتجاج ریکارڈ کرایا گیا۔بی بی سی کے مطابق پاکستان اور بھارت نے ایک دوسرے پر بلااشتعال فائرنگ کے الزامات عائد کئے ہیں جن میں بی ایس ایف کے ایک جوان سمیت متعدد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ سیالکوٹ ورکنگ بائونڈری لائن پر بھارتی سیکورٹی فورسز کی بلااشتعال فائرنگ وگولہ باری جاری ہے ،لوگ نقل مکانی پر مجبور ہیں ۔ مقبوضہ کشمیر سے ملحقہ سیالکوٹ میں ہزاروں مہاجرین جموں وکشمیر رہائش پذیر ہیں اور آزادکشمیر قانون ساز اسمبلی کے رکن چوہدری اسحاق کا کہنا ہے کہ بھارتی فائرنگ مقبوضہ کشمیر میں آزادی کی تحریک سے توجہ ہٹانا ہے اور چھ نومبر کو شہداء کشمیر سے یکجہتی کا دن منایا جائے گا ،بھارتی سیکورٹی فورسز کی چپراڑ ، ہرپال ، باجڑی گڑھی ، چپراڑ،چاروا ، سجیت گڑھ سیکٹروں پر بھارتی فائرنگ وگولہ باری کی وجہ سے مزید دودوپاکستانی شہری اور درجنوں مویشی شدید زخمی ہوگئے ہیں، بھارتی فائرنگ وگولہ باری کا سلسلہ رات گئے تک جاری رہااور پنجاب رینجرز بھارتی فائرنگ وگولہ باری کا منہ توڑ جواب دیتی رہی ہے، بھارتی فائرنگ وگولہ باری کی وجہ سے اسی سالہ غلام رسول اور 56سالہ ارشد شدید زخمی ہوئے ہیں ۔آزادکشمیر قانون ساز اسمبلی کے رکن چوہدری محمد اسحاق کا کہنا ہے کہ ورکنگ بائونڈری لائن اور لائن آف کنٹرول پر بھارتی فائرنگ وگولہ باری مقبوضہ کشمیر میں مظلوم ونہتے کشمیریوں پر بھارتی مظالم سے توجہ ہٹانے کی بھارتی سازش ہے۔دریں اثنا سکیورٹی ذرائع کے مطابق بھارتی فورسز کی بلااشتعال فائرنگ کا پاک فوج کی جانب سے موثر جواب دیا گیا۔ پاک فوج نے ورکنگ بائونڈری اور ایل او سی پر کئی بھارتی پوسٹوں کو نشانہ بنایا۔ پاک فوج کی جوابی کارروائی میں 5 بھارتی فوجیوں کی ہلاکت کی تصدیق ہوچکی ہے۔ منگل کے روز سے بھمبر سیکٹر میں فائرنگ کے تبادلے میں 4 بھارتی پوسٹیں بھی تباہ ہوئیں۔