موجودہ صورتحال میں نظام کو خطرہ ہو سکتا ہے: خورشید شاہ

27 اکتوبر 2016

تحریک کو کامیاب کرنے کیلئے سب سے پہلے لیڈروں کو قربانیاں دینا پڑتی ہیں‘ میڈیا سے گفتگو
حیدر آباد (صباح نیوز) قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے کہا ہے کہ احتجاج کا  حق سب کو ہے لیکن تحریک انصاف کے 2 نومبر کے احتجاج سے نظام کو خطرہ بھی ہو سکتا ہے۔ میڈیا سے گفتگو میںانہوں نے ایک بار پھر عمران خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ عمران خان کارکنوں کو آخری حد تک نہ لاے جائیں اور حکومت بھی پرتشدد ماحول پیدا نہ کرے، احتجاج کا حق سب کو ہے لیکن تحریک انصاف کے 2 نومبر کے احتجاج سے نظام کو خطرہ بھی ہو سکتا ہے۔اپوزیشن لیڈر نے مزید کہا ملک میں اتار چڑھا دیکھا ہے عمران خان نے ابھی تک کچھ نہیں دیکھا۔ ہم نے کوڑے قید اور پھانسیاں دیکھی ہیں۔ تحریک کو کامیاب کرنے کیلئے سب سے پہلے لیڈروں کو قربانیاں دینا پرتی ہیں، خورشید شاہ نے کہا کہ سیاست میں سب کو احتجاج کا حق ہے لیکن احتجاج ایسی صورت اختیار نہ کرے جس سے جانوں کو نقصان پہنچے اس لیے عمران خان بھی کارکنوں کو آخری حد تک نہ لے کر جائیں کیونکہ کارکنان کا تحفظ بھی ان کی ذمہ دری ہے جب کہ حکومت بھی احتجاج میں تشدد کا ماحول نہ بنائے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت ملک سنگین حالات سے گزر رہا ہے اور تحریک انصاف کے 2 نومبر کے دھرنے سے سسٹم کو خطرہ ہوسکتا ہے۔خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی نے 3 ڈکٹیٹروں سے جنگ لڑی، لیڈرز نے اپنی جان دی اور کوڑے کھائے لیکن کارکنوں کا نقصان نہیں ہونے دیا جب کہ پیپلز پارٹی پارلیمنٹ پر یقین رکھتی ہے لہذا مسائل پارلیمنٹ میں حل ہونے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ میں عمران خان کی سوچ اورخیالات سے بہت آگے ہوں اور الزامات لگتے رہتے ہیں، عمران پر بھی الزامات لگے ہیں جب کہ میرے خلاف آج تک کوئی ثابت نہیں ہوا۔
خورشید شاہ