جعلی پاکستانی شناختی کارڈ بنانے پرنیلگوں آنکھوں والی افغان خاتون شربت گلہ گرفتار

27 اکتوبر 2016

پشاور(بیورورپورٹ)فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) پشاور کرائم سرکل نے نیشنل جیو گرافک کے جریدے میں چھپی تصویر سے شہرت پانےوالی افغان خاتون شربت گلہ کو پاکستانی شناختی کارڈز بنانے کے الزام میں گرفتارکرلیاہے جس کے خلاف کیس رجسٹرڈ کرکے باقاعدہ تفتیش شرو ع کردی گئی ہے تفتیش کادائرہ کار شناختی کارڈ عملہ تک بڑھانے کافیصلہ کیاگیاہے اورجلد ہی شناختی کارڈز بنانے والے نادرا عملہ کے خلاف بھی کیس رجسٹرڈ کر دیا جائےگا تقریباً ڈیڑھ سال قبل ایف آئی اے کرائم سرکل پشاور کو شکایات ملی تھیں کہ نیشنل جیوگرافک کے جرےدے پر چھپنے والے تصویر میں اپنی نیلگو آنکھوں سے پوری دنیا میں شہرت پانے وا لی افغان خاتون شربت گلہ نے اپنا اور دو بیٹیوں کےلئے جعلی دستاویزات کے ذریعہ پاکستانی شناختی کارڈ ز بنارکھے ہیں جس پر ایف آئی اے نے باقاعدہ تفتیش شروع کردی تھی تاہم اس دوران شربت گلہ اپنی بیٹیوں اورشوہر کے ہمراہ کہیں پرروپوش ہوگئی جس کی گرفتاری کےلئے تلاش شروع کردی گئی تھی تاہم گزشتہ روز ایف آئی اے کرائم سرکل پشاورکو اطلاع ملی کہ شربت گلہ دوبارہ اپنے مکان واقع نوتھیہ واپس آگئی ہے جس پر ایف آئی اے ٹیم نے چھاپہ مارا اور شربت گلہ کو جعلی دستاویزات کے ذریعہ پاکستانی شناختی کارڈز بنانے کے الزام میں گرفتارکرلیا جسے تفتیش کےلئے ایف آئی اے کرائم سرکل منتقل کردیا گیا ہے ذرائع نے بتایا کہ ایف آئی اے حکام نے افغان خاتون کےلئے پاکستانی شناختی کارڈ بنوانے والے نادرا عملہ کے خلاف بھی تحقیقات کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے اور اس سلسلہ میں کیس رجسٹرڈ کرکے نادراکے ملوث اہلکاروں کی گرفتاری بھی عمل میں لائی جائے گی۔
شربت گلہ