الیکشن کمیشن نے اراکین پارلیمنٹ کے اثاثوں کی چھان بین کا فیصلہ کر لیا

27 اکتوبر 2016

بعض جماعتیں الیکشن کمیشن کو خود مختار اور آزاد ہوتا نہیں دیکھنا چاہتیں‘ بابر یعقوب فتح محمد
اسلام آباد(خصوصی نمائندہ)الیکشن کمیشن نے اراکین پارلیمنٹ کے اثاثوں کی چھان بین کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اس حوالے سے سیکرٹری الیکشن کمیشن بابریعقوب فتح محمد نے مشاورتی اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بعض جماعتیں الیکشن کمیشن کو آزاد اور خودمختار ہوتا نہیں دیکھنا چاہتیں انہوں نے کہا کہ اجلاس میں فیصلہ ہوا ہے کہ ابتدامیں چند سیاسی جماعتوں کے اہم لوگوں سے چھان بین کا آغاز کیا جائے گا۔ جتنے اراکین پارلیمنٹ نے اپنے اثاثہ جات کے گوشوارے الیکشن کمیشن کے سامنے ظاہر کئے ہیں ان اثاثہ جات کی باقاعدہ چھان بین ایف بی آر اور اسٹیٹ بنک سمیت تمام سرکاری اداروں سے کی جائے گی۔ اخراجات کم کرکے انتخابات عام آدمی کی دسترس میں لانا چاہتے ہیں انتخابی ضابطہ اخلاق پر تمام جماعتوں سے تحریری تجاویز مانگی ہیں ۔ تمام سیاسی جماعتوں نے الیکشن کمیشن کو بااختیار بنانے کے عزم کا اظہار کیا ہے ۔ اجلاس میں سیاسی جماعتوں سے الیکشن میںٹرانسپورٹ کے اخراجات پر مشاورت ہوئی جماعتوں نے انتخابات میں جلسے جلوسوں کی مکمل پابندی پر اعتراض کیا ۔ سیاسی جماعتوں پر حلقے میں ایک جلسہ کرنے کی تجویز دی ہے ۔ سیاسی جماعتوں نے انتخابات میں پینا فلیکس اور بینرز کی پابندی پر اتفاق کیا۔
اثاثے۔ چھان بین