اسلام آباد کا احتجاج پرامن ہے، پولیس حالات خراب نہ کرے: محمود الرشید کا آئی جی کو خط

27 اکتوبر 2016

لاہور (خصوصی نامہ نگار) پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں محمود الرشید نے کہا ہے کہ اسلام آباد کا احتجاج پرامن ہے پولیس گرفتاریاں اور کارکنوں کو ہراساں کر کے حالات خراب نہ کرے، آئی جی پنجاب کے نام خط میں محمود الرشید نے مزید کہا کہ تحریک انصاف پاکستان کی بڑی سیاسی ہے اور اس نے ہمیشہ عوامی حقوق کی پرامن جدو جہد کی اور اب بھی تحریک انصاف نے دو نومبر کو اسلام آباد دھرنے کی کال دے رکھی ہے جس کے بارے میں عام تاثر یہ ہے کہ پولیس ہمارے کارکنوں کو حراست میں لینے کا ارادہ رکھتی ہے لیکن میں آپ پر واضح کرنا چاہتے ہیں کہ ہمارا احتجاج قانون کے مطابق پرامن اور ملک کے تحفظ، سلامتی، احتساب اور آئندہ آنے والی نسل کو کرپشن فری پاکستان دینے کیلئے ہے۔ حکمران جماعت کے ایما پر تحریک انصاف کے اہم رہنمائوں اور کارکنوں کی پکڑ دھکڑ کے حوالے سے تیار کی جانے والی فہرستیں اور پولیس پر گرفتار یوں کے حوالے سے ڈالا جانے والا دبائو نہ صرف افسوسناک بلکہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ محمود الرشید نے کہا کہ، پاکستان تحریک انصاف امید کرتی ہے کہ محکمہ پولیس کے فرض شناس افسر و اہلکار سیاسی دبائو کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اپنے پیشہ وارانہ امور سر انجام دے گی۔ امید ہے پنجاب پولیس اپنی ذمہ داریوں کو نبھاتے ہوئے نہ صرف سیاسی کارکنوں کی بلا جواز گرفتاریوں اور انہیں ہراساں کرنے سے باز رہے گی بلکہ ان کے جان و مال کا تحفظ بھی یقینی بنائے گی۔ علاوہ ازیں پاکستان تحریک انصاف پنجاب کے سابق صدر اعجاز احمد چوہدری نے کہا ہے کہ 2نومبر کا احتجاج اور آج لاہور سے شر وع ہو نے والا پیدل لانگ مارچ پانامہ چوروں کے احتساب اور کرپشن کے خاتمے میں اہم سنگ میل ثابت ہو گا۔ 2نومبر کو حکومت نے ریاستی تشدد یا گرفتاریاں کر نے کی کوشش کی گئی تو پورے ملک میں دمادم مست قلند رہو گا۔ پانامہ چور حکمرانوں سے قوم کسی خیر کی امید نہ رکھے، موجودہ حکمران ملکی سلامتی، خود مختاری اور نہ ہی عوام کے جان ومال کا تحفظ کر سکے، پانامہ چور حکمرانوں کی کرپشن اور لوٹ مار کی وجہ سے عالمی سطح پر پاکستان کے امیج کو شدید نقصان پہنچا ہے ،کرپشن کے خاتمے اور پانامہ چوروں کے احتساب تک ملک آگے نہیں بڑھ سکتا، وہ گزشتہ روز پارٹی کے بانی رہنما شبیر سیال کی رہائش گاہ پر پیدل مارچ کے شرکاء سے گفتگو کر رہے تھے۔ علاوہ ازیں سابق گورنر پنجاب چودھری محمد سرور نے کہا ہے کہ حکمرانوں کی سیاسی شہید ہونے کی خواہش پوری نہیں ہو گی‘ 2نومبر کو ملک میں کرپشن کے خلاف تحریک انصاف کا فائنل رائونڈ شروع ہونے جا رہا ہے‘ حکمران اپوزیشن کی ٹی او آرز مان لیں تو پانامہ لیکس کا مسئلہ آج ہی حل ہو جائیگا‘ حکمران بندوق لاٹھی اور گولی سے بھی تحریک انصاف کے پرامن احتجاج کا راستہ نہیں روک سکتے‘ تحریک انصاف بلاامتیاز اور بے رحم احتساب کی بات کرتی ہے جو حکمرانوں کو پسند نہیں آتی۔ وہ 2نومبر کی تیاریوں کے حوالے سے منصورہ بازار میں عوامی کنونشن سے خطاب کر رہے تھے۔ چودھری محمد سرور نے کہا ہے کہ عمران خان نے اس ملک میں کرپشن کے خاتمے اور احتساب کیلئے جو جنگ لڑ رہی ہے وہ کامیابی کے قریب پہنچ چکی ہے عوام اور تحریک انصاف کے کارکنوں کو آگے بڑھ کر اس جنگ میں عمران خان کا ساتھ دینا ہو گا۔ حکمران کرپشن کا حساب دینے کی بجائے سیاسی شہید ہونا چاہتے ہیں مگر ان کی یہ خواہش کسی صورت پوری نہیں ہو گی اور ہم ان سے کرپشن کی پائی پائی کا حساب لے کر ہی دم لیں گے۔ ملک ظہیر عباس کھوکھر نے کہا کہ عمران خان کے ساتھ پاکستان کے عوام کھڑے ہیں اور اس بات میں اب کوئی شک نہیں کہ مسلم لیگ کی کرپٹ حکومت کے آخری دن آ چکے ہیں۔ سردار کامل عمر نے کہا کہ عمران خان کی کرپشن کے خاتمے اور تبدیلی جنگ ضرور کامیاب ہو گی۔