ٹوکن ٹیکس، فیس کے بغیر سرکاری گاڑیوں کو سبز نمبر پلیٹس کی فراہمی سے انکار

27 اکتوبر 2016

لاہور (احسان شوکت سے) محکمہ ایسائز، ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹکس کنٹرول نے ٹوکن ٹیکس اور فیس کی ادائیگی کے بغیر سرکاری محکموں کی گاڑیوں کو سبز نمبر پلیٹس کی فراہمی سے انکار کر دیا ہے جبکہ پنجاب حکومت کی جانب سے سرکاری محکموں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ہر صورت محکمہ ایکسائز کی فراہم کردہ کمپیوٹرائزڈ نمبر پلیٹس آویزاں کریں۔ اس صورتحال میں چیف منسٹر مانیٹرنگ یونٹ لا اینڈ آرڈر لائحہ عمل طے کرنے کے لیے آئندہ چند روز میں اجلاس طلب کرے گی۔ تفصیلات کے مطابق دہشت گردی کے خاتمے کے لیے نیشنل ایکشن پلان کے تحت حکومت پنجاب نے محکمہ ایکسائز، پولیس، ٹریفک پولیس، محکمہ ٹرانسپورٹ اور چیف منسٹر مانیٹرنگ یونٹ لا اینڈ آرڈر کے باہمی اشتراک سے مشترکہ ٹیمیں تشکیل دے کر غیرنمونہ، بغیر نمبر پلیٹس اور ٹوکن ٹیکس نادہندہ گاڑیوں کے خلاف کریک ڈائون کا سلسلہ جاری کر رکھا ہے۔ دوسری طرف صورتحال پر شہر میں چلنے والی 28 سو مختلف سرکاری محکموں کی گاڑیوں کی نمبر پلیٹس محکمہ ایکسائز نے جاری نہیں کی ہیں۔ محکمہ ایکسائز کے مطابق مختلف محکموں نے حکومتی دبائو کہ وہ ہر صورت محکمہ ایکسائز کی فراہم کردہ نمبر پلیٹس لگائیں پر ہم سے نمبر پلیٹس کے لیے رابطہ کیا ہے مگر ہمارا موقف ہے کہ وہ نمبر پلیٹس کی 12 سو روپے فیس اور جتنے سال کا ٹوکن ٹیکس ادا نہیں کیا گیا وہ ٹوکن ٹیکس ادا کریں۔ اس کے بعد نمبر پلیٹ فراہم کی جائے گی۔ ڈائریکٹر ایکسائز موٹر برانچ محمد آصف نے کہا ہے کہ ہم شہر میں ٹوکن ٹیکس نادہندہ گاڑیوں کے خلاف بلاامتیاز کارروائی کر رہے ہیں۔ سرکاری گاڑیاں بھی اس سے مستثنیٰ نہیں ہیں۔