کچھ علاج اس کا بھی ہو

27 اکتوبر 2016
کچھ علاج اس کا بھی ہو

مکرمی! بعض اساتذہ کرام خود تو محکمہ تعلیم کے گورنمنٹ سکولوں اور کالجوں میں ملازمت کر رہے ہیں مگر اپنے بچوں کو پرائیویٹ اداروں میں داخلہ دلاتے ہیں اس کا مطلب یہ ہے کہ ان کو اپنے آپ پر اعتماد نہیں ہے ایسے اساتذہ سرکاری سکولوں میں ملازمت کے اہل نہیں ہیں ان کو سرکاری مدارس سے فارغ کر دینا چاہیے کیونکہ وہ اتنی بھاری تنخواہ لینے کے باوجود بھی اپنے فرائض بخوبی ادا نہیں کرتے سکول میں صرف وقت گزاری کےلئے آتے ہےں ایسے اساتذہ ملک ومعاشرے پر بوجھ ہےں۔ محمدشاہد