وزیر داخلہ اور خادم اعلیٰ میری راہنمائی کریں

27 اکتوبر 2016
وزیر داخلہ اور خادم اعلیٰ میری راہنمائی کریں

مکرمی! خادم اعلٰی پنجاب میاں شہبازشریف جس انداز سے ایکسائز ‘ جنگلات ‘ تعلیم اور مال سمیت دیگر محکموں میں اصلاحات کر رہے ہیں ہم اخبارات اور ٹی وی چینل پر ان کے مثبت اثرات بھی دیکھ رہے ہیں مگر اب بھی کچھ ایسے عناصر موجود ہیں جو اپنے اختیارات کے زعم اور گھمنڈ میں اختیارات کو پسند و نا پسند کے تناظر میں استعمال کر رہے ہیں میرا تعلق پنجاب کی سب سے بڑی تحصیل گوجر خان سے ہے گا¶ں صندل کھینگرو میں عرصے سے مقیم ہوں محنت مزدوری سے وقت ملتا ہے تو تنظیم اسلامی کے پلیٹ فارم سے تبلیغ اور اصلاح معاشرہ کے لئے کمر بستہ رہتا ہوں میں نے ایک کنال زمین اپنے ہی گا¶ں میں خریدی جب اراضی کا انتقال کرانے گا¶ں کے پٹواری کے پاس گیا تو پہلے ٹال مٹول کیا گیا پھر باقاعدہ مٹھی گرم کرنے کو کہا گیا جب میں نے سرکاری کام کے عوض ”نذرانہ“ دینے سے انکار کیا تو مذکورہ پٹواری آفس سے دھمکی ملی کہ کام نہیں ہوگا جس سے کہنا ہے کہدو اس کے بعد میں اسسٹنٹ کمشنر گوجر خان کے نوٹس میں سارا مسئلہ لایا لیکن اے سی آفس نے ابھی تک درخواست پر نوٹس نہیں لیا گیا‘ میری وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان ‘ ڈسی سی او راولپنڈی اور گوجر خان کے غیور شہریوں سے اپیل ہے کہ وہ اس معاملہ میں میری راہنمائی کریں۔
(راجہ ادریس خالد‘ رکن تنظیم اسلامی تحصیل03315129133 گوجر خان)