اقوام متحدہ کمشن کی کیانی‘ پرویز الہی اور سابق سربراہ آئی بی سے ملاقاتیں

27 فروری 2010
راولپنڈی (جی این آئی + مانیٹرنگ ڈیسک ) محترمہ بےنظیر بھٹو شہید کے قتل کی تحقیقات کے لئے اقوام متحدہ تحقیقاتی کمشن کے سربراہ ہرالڈو میونوز نے گذشتہ روز آرمی چیف جنرل اشفاق پرویزکیانی سے ملاقات کی‘ اس دوران تحقیقات کے مختلف پہلو¶ں کے حوالے سے گفتگو کی گئی۔ ہرالڈو میونوز نے جنرل کیانی کو اب تک کی جانے والی تحقیقات سے آگاہ کیا۔ دریں اثناءتحقیقاتی کمشن نے اسلام آباد میں سابق سربراہ آئی بی اعجاز شاہ سے ملاقات کی۔ ملاقات میں بےنظیر قتل کیس کے حوالے سے تحقیقاتی کمشن نے اعجاز شاہ سے مختلف سوالات کئے۔ یہ ملاقات تقریباً ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہی۔ اس موقع پر کمشن نے اعجاز شاہ سے بےنظیر قتل کیس کی دستاویزی تفصیلات کا بھی مطالبہ کیا۔ لاہور سے جی این آئی کے مطابق اقوام متحدہ کی ٹیم نے لاہور میں پرویز الہی سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی جو پون گھنٹے تک جاری رہی۔ ذرائع کے مطابق ٹیم نے ان کے بے نظیر بھٹو سے اختلافات اور ان کے اس خط کے حوالے سے سوالات پوچھے جس میں بے نظیر بھٹو نے اپنے قتل کے حوالے سے خدشات کا اظہار کیا تھا۔ مانیٹرنگ ڈیسک کے مطابق اقوام متحدہ کا کمشن جمعہ کو واپس چلا گیا۔ اقوام متحدہ کے مرکز اطلاعات کی طرف سے جاری بیان کے مطابق کمشن نے تحقیقات کے عمل میں بھرپور تعاون فراہم کرنے پر حکومت پاکستان اور عوام کا شکریہ ادا کیا ہے۔ ترجمان کے مطابق کمشن کے اراکین نے صدر، وزیراعظم اور اعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کیں جبکہ سول سوسائٹی کے اراکین سے بھی وفد کے اراکین ملے۔ کمشن 31 مارچ تک اپنی تحقیقات مکمل کر لے گا اور رپورٹ کی ایک کاپی یو این سیکورٹی کونسل میں بھی جمع کرائی جائے گی۔ کمشن کا کہنا ہے کہ بینظیر بھٹو کے قتل کے ذمہ داروں کا تعین کرنا حکومت پاکستان کا کام ہے، یو این کمشن اپنے مینڈیٹ کے مطابق اپنی تحقیقات مکمل کرے گا۔
اقوام متحدہ کمشن / ملاقاتیں