بگرام ائر بیس پر 15 پاکستانی قیدیوں کی موجودگی کا انکشاف

27 فروری 2010
اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک + ریڈیو نیوز) افغانستان میں امریکی فوج کے زیراستعمال بگرام ایئربیس پر 15 پاکستانی قیدیوں کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے۔ انسانی حقوق کی ایک برطانوی تنظیم کے ڈائریکٹر کلائیو اسٹیفرڈ سمتھ نے ڈیفنس آف ہیومن رائٹس کی چیئرپرسن آمنہ مسعود جنجوعہ کے ہمراہ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بگرام ایئربیس پر 15 اور گوانتاناموبے میں 6 پاکستانی موجود ہیں جنہیں بنیادی انسانی اور قانونی حقوق میسر نہیں ہیں ان کا کہنا تھا کہ امریکی اور برطانوی حکومتوں نے پاکستانی حکومت کی مدد سے اپنے ایجنڈے کی تکمیل کے لئے ان افراد کو حراست میں لے رکھا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ بگرام ایئربیس پر مختلف ممالک کے کل 770 اور گوانتاناموبے میں 195 قیدی موجود ہیں۔ کلائیو اسٹیفرڈ برطانوی اور امریکی دہری شہریت رکھتے ہیں۔ انہوں نے پریس کانفرنس کے آغاز پر اپنے دونوں پاسپورٹ لہراتے ہوئے کہا کہ وہ سابق امریکی صدر جارج بش اور سابق برطانوی وزیراعظم ٹونی بلیئر کے انسانیت سوز سلوک پر پاکستانی عوام سے شرمندہ ہیں ان کا کہنا تھا کہ امریکی سفیر این ڈبلیو پیٹرسن کو قانونی نوٹس بھجوا دیا گیا ہے جس میں 15 پاکستانیوں کی بگرام ایئربیس پر موجودگی کے بارے وضاحت طلب کی گئی ہے۔
پاکستانی قیدی

آئین سے زیادتی

چلو ایک دن آئین سے سنگین زیادتی کے ملزم کو بھی چار بار نہیں تو ایک بار سزائے ...